35

صہیونی ریاست کا فلسطینیوں کو گھروں سے محروم کرنے ،مکانات مسماری کا سلسلہ جاری

Spread the love

رام اللہ (صرف اردو آن نیوز) صہیونی ریاست

قابض صہیونی ریاست کی طرف سے فلسطینیوں کو ان کے گھروں اور دیگر

املاک سے محروم کرنے اور ان کے مکانات کی مسماری کا سلسلہ بدستور جاری

ہے۔  ایک رپورٹ کے مطابق رواں سال کے دوران مقبوضہ مغربی کنارے اور

بیت المقدس میں فلسطینیوں کے 506 مکانات مسمار کیے گئے ہیں۔اقوام متحدہ کے

انسانی حقوق دفتر ‘اوچا’ کی طرف سے جاری کی گئی رپورٹ میںبتایا گیا ہے کہ

رواں سال القدس میں اسرائیلی فوج نے فلسطینیوں کے 134 مکانات مسمار کیے۔

اوچا کی رپورٹ کے مطابق قابض صہیونی حکام نے گذشتہ دو ہفتوں کے دوران

اسماعیل ھنیہ کا شہید ہونیوالے فلسطینیوں کے اہل خانہ سے اظہار تعزیت

القدس اور غرب اردن میں فلسطینیوںکی 22 املاک مسمار کیں جن میںبیشتر رہائشی

مکانات شامل ہیں۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گزشتہ دو ہفتوں کے دوران مسمار

کیے گئے 22 مکانات کی مسماری کے نتیجے میں 50 فلسطینی بے گھر ہوئے

جبکہ بالواسطہ طور پر 200 افراد متاثر ہوئے ہیں۔اقوام متحدہ کی رپورٹ کے

مطابق دو ہفتوں کے دوران مسمار کیے جانے والے 22 مکانات میں سے 8 کو ان

کے مالکان کے ہاتھوں جبری طور پر مسمار کرایا گیا۔ مسمار کیے گئے مکانات

میں سے 60 فی صد سیکٹر ‘سی’ میں واقع تھے۔ اس سیکٹر پر اسرائیل کا مکمل

قبضہ ہے۔

صہیونی ریاست

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں