56

چارسال گزر گئے، بھارت سرجیکل سٹرائیک کے جھوٹے دعوے کا ثبوت پیش نہ کر سکا

Spread the love

اسلام آباد(صرف اردو آن لائن نیوز ) بھارت سرجیکل سٹرائیک

سرجیکل سٹرائیک کے جھوٹے دعوے کو چار سال گزر گئے لیکن بھارت آج تک

کوئی ثبوت فراہم نہیں کر سکا ہے۔ بین الاقوامی میڈیا نے خود زمینی حقائق دیکھ

کر ہی بھارت کے جھوٹ کو پول کھول دیا تھا۔بھارتی فوج نے 28 ستمبر

2016ء￿ کو لائن ف کنٹرول عبور کرکے پاکستانی سرزمین پر سرجیکل

سٹرائیک کے ذریعے جھوٹا دعویٰ کیا اور اپنے عوام کو بے وقوف بنانے کے لیے

میڈیا کے ذریعے اس پر خوب شادیانے بھی بجائے گئے۔پاکستان نے بھارتی دعوے

کو یکسر مسترد کرتے کرتے ہوئے ملکی اور غیر ملکی میڈیا کو ایل او سی کے

ان تمام مقامات کا دورہ کرا دیا۔ بین الاقوامی میڈیا نے خود زمینی حقائق دیکھ کر

رپورٹنگ کی اور بھارت کے جھوٹ کو پول کھول دیا۔حقائق کے مطابق 28 ستمبر

2016ء￿ کو ایل او سی کے مختلف سیکٹرز پر بھارتی افواج کی شدید فائرنگ اور

جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزیوں سے پاک فوج کے دو جوان شہید ہوئے۔پاک

لاہور، ڈاکٹر سے بدسلوکی کرنیوالے پولیس اہلکار گرفتار

فوج نے بھارتی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیتے ہوئے 8 بھارتی فوجیوں کو ہلاک

اور ایک کو گرفتار کر لیا تھا۔ پاک فوج کی جوابی کارروائی میں کئی بھارتی

پوسٹیں بھی تباہ ہوئیں۔پاکستان نے بعد میں انسانی ہمدردی اور جذبہ خیر سگالی کے

تحت بھارتی فوجی بابو لال کو واپس بھیج دیا تھا۔ پاکستان آج چار سال بعد بھی اس

انتظار میں ہے کہ بزدل دشمن نام نہاد سرجیکل سٹرائیک کا کوئی ایک ثبوت تو دے

لیکن بھارت نے مزید ذلت سے بچنے کے لیے چپ سادھ لی ہے۔

بھارت سرجیکل سٹرائیک

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں