69

پارلیمنٹ کے 17 اْمیدواروں میں نشے کی عادت کا شکار ہونے کی تصدیق کی گئی

Spread the love

قاہرہ (صرف اردو آن لائن نیوز) نشے کی عادت

مصر میں رواں سال اکتوبر اور نومبر میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات سے قبل

امیدواروں کے طبی معائنے کے دوران لرزہ خیز انکشاف سامنے آیا جس میں بتایا

گیا ہے کہ مختلف گورنریوں سے انتخابات میں حصہ لینے کی تیاری کرنے والے

امیدواروں کے طبی معائنے سے پتا چلا ہے کہ وہ منشیات کی لعنت میں مبتلا ہیں۔

نشے کے عادی ہونے کی بنا پر ان کے کاغذات مسترد کر دیے گئے ہیں۔عرب ٹی

وی کے مطابق پارلیمانی انتخابات کی دوڑ سے باہر کیے گئے امیدواروں میں

خواتین بھی شامل ہیں جو مبینہ طور پر نشے کی لت کا شکار ہیں۔مصر کی دقھلیہ

گورنری میں امیدواروں کے طبی معائنے کے لیے میڈیکل کمیٹی نے ایک بیان میں

کہا ہے کہ پارلیمنٹ کے 17 اْمیدواروں کو کاغذات کے ساتھ جوڈیشل کمیٹی کو

بھیجے گئے تھے جن پر نشے کی عادت کا شکار ہونے کی تصدیق کی گئی ہے۔ ان

میں تین خواتین بھی شامل ہیں۔گورنری میں وزارت صحت کے سیکرٹری اطلاعات

U may kiss the bride now

ڈاکٹر سعد مکی نے بتایا کہ الیکشن کمیشن کو ان امیدواروں کے کاغذات کی

منسوخی کے لیے تحریری طور پر بتا دیا گیا ہے کیونکہ منشیات استعمال کرنے

والے افراد کو پارلیمانی انتخابات میں حصہ لینے کی اجازت نہیں ہے۔مشرقی

گونری میں منشیات کے استعمال کے ٹیسٹوں کے دوران 6 امیدواروں کے ٹیسٹ

مثبت آئے جس کے بعد انہیں الیکشن کی دوڑ سے باہ کر دیا گیا۔القلیوبیہ میں تین

امیدواروں کو منشیات کے استعمال کی بنیاد پر الیکشن کی دوڑ سے نکالا گیا۔

نشے کی عادت

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں