45

ایل او سی پر بھارتی فو ج کی فائرنگ ، 2 جوان شہید

Spread the love

راولپنڈی (صرف اردو آن لائن نیوز) بھارتی فو ج کی فائرنگ

لائن آف کنٹرول پر بھارتی فوج کی فائرنگ سے پاک فوج کے 2جوان جام شہادت

نوش کر گئے۔ پاکستان کی مسلح افواج نے بھارتی جارحیت کا بھرپور جواب دیتے

ہوئے دشمن کی چوکیاں تباہ کر دیں۔ آئی ایس پی آر کے مطابق بدھ کے روز

بھارتی فوج کی طرف سے لائن آف کنٹرول کے دیوا سیکٹر میں جنگ بندی

معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی۔ فائرنگ کے تبادلے میں 29 سالہ سپاہی نور

الحسن اور 25 سالہ وسیم علی جام شہادت نوش کر گئے۔پاک فوج نے بھارتی

جارحیت کا موثر جواب دیتے ہوئے دشمن کی چیک پوسٹوں کو نشانہ بناتے ہوئے

انہیں تباہ کر دیا۔ ترجمان پاک فوج کے مطابق 2020 میں قابض بھارتی فوج کی

جانب سے اب تک 2333 مرتبہ جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی جا چکی

ہے۔جبکہ میڈیا رپورٹس کے مطابق لائن آف کنٹرول پر تتہ پانی درہ شیرخان سہڑہ

سیکٹرز کے سویلین آبادی کے علاقوں پر گزشتہ کئی ہفتوں سے بھارتی فوج کی

جانب سے بلاا شتعا ل شدید فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ جاری ہے ، جس کے

نتیجے میںمتعدد رہائشی مکانات شدید متاثراور قیمتی مو یشی ہلاک وزخمی

،معمولات زندگی مفلوج ہوکررہ گئے ہیں۔ منگل اور بدھ کی درمیانی شب ایک بجے

بھارتی فوج نے اچانک دوبارہ بلااشتعال شدید فائرنگ وگولہ باری شروع کرد ی

اور ان سیکٹرز کے سویلین آبادی کے علاقوں تاہی مواڑہ، نمب، سہڑہ ، درہ

شیرخان ، برموچ کو براہ راست نشانہ بنایا ، ہیوی گنوں کا بے دریغ استعمال کیا گیا

جس کے نتیجہ میں تا ہی مواڑہ سے عبدالقیو م ، محمد حفیظ ملک،مشتاق ملک

،سہڑہ سے محمد لطیف چو ہد ری، سردار طلعت ایوب سمیت دیگر متعدد افراد کے

رہائشی مکانات شدیدمتاثر ہوئے اور قیمتی مو یشی ہلاک وزخمی ہوئے۔ان علاقوں

میں بجلی لائن کی تاریں کٹ جانے سے بجلی کی ترسیل معطل ہوگئی ،متاثرین ایل

او سی کا کہنا ہے یہ کشیدہ صورتحال ہمارے لئے جنگ کے متراد ف ہے ، بزد ل

بھارتی فوج کا سول آبادی کو براہ راست نشانہ بنا ناانسانی حقوق کی سنگین خلاف

ورزی ہے، عالمی برداری واقوام متحدہ کو فوری نوٹس لینا اور ظلم وبربریت کا یہ

سلسلہ بند کروانا چاہیے ۔ ہم بھارت کی ان بزدلانہ حرکتوں سے ڈرنے والے نہیں

بلکہ افواج پاکستان کے ساتھ مل کر بزدل دشمن کا مقابلہ کرنے کیلئے تیار ہیں ۔

ماں: میکسم گورکی قسط نمبر 17

دریں اثناء سابق وزیر آزاد کشمیر سردار عبد القیو م خان نیازی نے بھارتی فوج کی

بربریت کی پرزور مذمت کی ہیجبکہ مسلم لیگ (ن)کے صدر اور قائد حزب

اختلاف شہبازشریف نے ایل او سی کے دیو سیکٹر میں بھارتی فوج کی بلاجواز

فائرنگ کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ سپاہی نور حسین اور سپاہی وسیم

علی کی شہادت ارض پاک کے دفاع کیلئے عظیم قربانی ہے، قوم کا سر فخر سے

بلند کردیا، بھارتی کمین گاہوں کو بھرپور نشانہ بنانے پر پاک فوج کو خراج تحسین

پیش کرتے ہیں۔ عالمی برادری اور اقوام متحدہ 2020 میں 2333 مرتبہ جنگ

بندی معاہدے کی بھارتی خلاف ورز یوں پر آنکھیں کھولے ۔ بھارت جنوبی ایشیامیں

جنگ بھڑکا کر پوری دنیا کے امن و سلامتی سے کھیل رہا ہے، خطے اور پاکستان

کیخلاف بھارتی دہشتگردی کسی بڑے حادثے کا سبب بن سکتی ہے، دنیا ہوش کے

ناخن لے ،ایل او سی پر فائرنگ، عام شہریوں کو نشانہ بناکر بھارت مقبوضہ جموں

وکشمیر میں اپنی ریاستی دہشت گردی اور کشمیریوں پر بہیمانہ مظالم سے دنیا کی

توجہ ہٹا نہیں سکتا۔

پاک بھارت فائرنگ

بھارتی فو ج کی فائرنگ

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں