51

درخواست مسترد ،نواز شریف کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

Spread the love

ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری

اسلام آباد(صرف اردو آن لائن نیوز ) اسلام آباد ہائی کورٹ نے العزیزیہ ریفرنس

میں سابق وزیراعظم نواز شریف کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست مسترد

کرتے ہوئے ان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیے۔اسلام آباد ہائی

کورٹ نے نواز شریف کی 22 ستمبر کو حاضری کے لیے ناقابل ضمانت وارنٹ

گرفتاری جاری کیے ہیں۔اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامرفاروق اور جسٹس

محسن اختر کیانی پر مشتمل بینچ نے ایون فیلڈ اور العزیزیہ ریفرنس میں سابق

وزیراعظم نوازشریف کی سزا کے خلاف اپیلوں اور قومی احتساب بیورو (نیب) کی

جانب سے ضمانت منسوخی کی درخواست پر سماعت کی۔ عدالت کی جانب سے آج

اشتہاری ملزم کی درخواست پر سماعت کی قانونی پوزیشن پر دلائل طلب کیے گئے

تھے، عدالت نے استفسار کیا تھا کہ کیاکسی ایک کیس کے اشتہاری ملزم کی

دوسرے کیس میں درخواست سنی جا سکتی ہے؟دوران سماعت جسٹس محسن اختر

کیانی نے ریمارکس دئے کہ ضمانت لیکر باہر جانے والے نے سرجری نہیں

کرائی،نہ ہی اسپتال داخل ہوا، نواز شریف کے میڈیکل سرٹیفکیٹ ایک کنسلٹنٹ کی

رائے ہے جو کسی اسپتال کی طرف سے نہیں۔جسٹس محسن اختر کیانی کا کہنا تھا

کہ ابھی تک کسی ہسپتال نے نہیں کہاکہ ہم کورونا کی وجہ سے نوازشریف کو

داخل کرکے علاج نہیں کرپارہے، ہمارا ضمانت کا حکم ختم ہو چکا ہے جس کے

اپنے اثرات ہیں۔ججز نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ سابق وزیر اعظم کو عدالت کی

جانب سے دی گئی آٹھ ہفتوں کی ضمانت کی مدت ختم ہو چکی ہے۔ اس لیے جب

تک وہ سرینڈر نہیں کرتے ان کی استثنی کی درخواست منظور نہیں کر سکتی۔

ججز نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ اگر ایسا کیا گیا تو ملک کا عدالتی ڈھانچہ شدید

متاثر ہوگا۔ عدالت کی طرف سے نواز شریف کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری

آسٹریلیا کا جلد کورونا ویکسین بنا کر مفت فراہم کرنے کا اعلان

سے متعلق فیصلے کی مصدقہ نقول حاصل کرنے کے بعد اسے برطانیہ میں

پاکستانی ہائی کمیشن بھجوایا جائے گا، جہاں پاکستانی حکام کو اس عدالتی حکم کی

تعمیل کروانے کے بارے میں کہا جائے گا۔ناقابل ضمانت گرفتاری کے وارنٹ

جاری ہونے کے بعد اگر کوئی شخص عدالت کی طرف سے مقرر کردہ تاریخ پر

پیش نہیں ہوتا تو اس کے دائمی ناقابل ضمانت وارنٹ جاری کرنے کے ساتھ ساتھ

اسے اشتہاری قرار دینے سے متعلق کارروائی شروع کر دی جاتی ہے۔العزیزیہ

سٹیل ملز کے فیصلے کے خلاف نواز شریف کی اپیل کی سماعت اب 22 ستمبر کو

ہو گی جس میں حکام عدالتی احکامات پر عملدرآمد سے متعلق رپورٹ پیش کریں

گے

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے توشیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری

اپنا تبصرہ بھیجیں