43

عَزم جواں

Spread the love

ارادے پختہ اور دل میں اپنے خاندان ، پیشہ ور ادارے اور وطن کا نام روشن کرنے کی لگن موجود ہو تو حیران کرنے اور چونکا دینے والے کارنامے اپنے آپ سامنے آتے رہتے ہیں۔ اللہ کے فضل و کرم سے آئے روز ایسے شاہکار وجود میں آتے ہیں کہ ہر محبِ وطن کا سر فخر سے بلند ہو جاتا ہے کہ اپنے ملک کے اندر ہی نہیں دوسرے ترقی یافتہ اور امیر ملکوں میں بھی وطن کے شہری انتہائی قابلِ فخر اور حیران کن ریکارڈ قائم کرتے رہتے ہیں۔

پُرتگال میں مقیم پاکستانی نژاد پُرتگالی خاتون ڈاکٹر شاکرہ نندنی جو پیشہ سے ایک ماڈل اور ڈانسر ہیں، اور اس کام میں انہوں نے ڈانس اینڈ موسیقی میں ڈاکٹریکٹ کی ڈگری حاصل کر رکھی ہے، آج انہوں نے اپنی جان توڑ محنت، لگن اور مستقل مزاجی سے آج بوم ماڈل ایجنسی (جو کہ پُرتگال کی تیسری بڑی اور یورپ کی ساتویں ماڈلنگ ایجنسی ہے) میں سی ای او کے عہدے کا چارج سنبھال کر پُرتگال میں پاکستان کی پہلی خاتون سی ای او ہونے کا اعزاز اپنے نام کر لیا ہے۔ اس سے قبل بھی ڈانس اور میزک میں پی ایچ ڈی کر کے پہلی پاکستانی خاتون ہونے کا اعزاز اپنی نام کر چُکی ہیں۔

انٹرویو کے دوران انہوں نے کہا کہ ” آج کل کے زمانہ میں ہر شخص کامیابی حاصل کرنا چاہتا ہے یہ بھی درست ہے کہ ہر شخص کی کامیابی کا معیار الگ ہے۔ انسان کی دوطرح کی زندگی ہو سکتی ہے ایک کامیاب زندگی اور دوسری مطمئن زندگی۔ انسان کامیاب ہونے کے لیے مسلسل ذہنی و جسمانی تگ ودو میں رہتا ہے مگر بعض منصوبہ بندی ہونے کی وجہ سے اپنے مقاصد حاصل نہیں کر پاتے اور مایوسی کا شکار ہوجاتے ہیں ۔ کسی بھی مقصد کے حصول کے لیے ضروری ہے کہ پہلے اپنے حصول اور مقصد کا تعین کیا جائے یعنی اپنی دلچپسی اور صلاحیتوں کے پیش نظر کسی بھی شعبہ کا انتخاب کیا جائے۔
۔
انہوں نے مزید کہا کہ پُرتگال میں خواتین کو عزت دی جاتی ہے، ایسا نہیں ہے جیسا کہ یورپ کے بارے میں ہمیں گمان ہوتا ہے یا ہم کسی فلم وغیرہ سے اپنے دماغ میں ایک امیج بنا لیتے ہیں، انہیں ایک مقام حاصل ہے اور پُرتگال میں انہیں ہر طرح کا تحفظ حاصل ہے۔

انٹرویو میں ڈاکٹر شاکرہ نندنی نے بتایا کہ انہیں بُوم ماڈلنگ ایجنسی کا حصہ ہونے پر فخر ہے۔ میں میرٹ پر یقین رکھتی ہوں اور میری تقرری اس کا منہ بولتا ثبوت ہے۔
سی ای او عہدے پر ترقی پانے والی ڈاکٹر شاکرہ نندنی کا ماننا ہے کہ محنت، لگن اور جذبے کے ساتھ ترقی اور کامیابی کے زینے طے کرنا مشکل نہیں ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں