58

ممتاز ناول نگار قرۃالعین حیدرکو بچھڑے 13برس بیت گئے

Spread the love

علی گڑھ(صرف اردو آن لائن نیوز ) قرۃالعین حیدر

اردو ادب کو اپنی باکمال تحریر سے ایک نیا اسلوب و شناخت دینے والی ممتاز ناول نگار قرالعین

حیدر کی 13 ویں برسی منائی گئی۔میڈیارپورٹس کے مطابق 20 جنوری 1927 میں بھارتی ریاست

اتر پردیش کے شہر علی گڑھ میں پیدا ہونے والی قرالعین حیدر کے دو ناولوں آگ کا دریا اور آخر

شب کے ہمسفر کو اردو ادب کا شاہکار مانا جاتا ہے۔ قرالعین حیدر کے دیگر مشہور ناولوں میں

آسٹریلیا کا جلد کورونا ویکسین بنا کر مفت فراہم کرنے کا اعلان

میرے بھی صنم خانے، چاندنی بیگم اور کار جہاں دراز شامل ہیں۔آخر شب کے ہمسفر کے لیے انہیں

ہندوستان کے سب سے باوقار ادبی اعزاز گیان پیٹہ ایوارڈ سے نوازا گیا جبکہ بھارتی حکومت نے

انہیں 1985 میں پدم شری اور 2005 میں پدم بھوشن جیسے اعزازات سے بھی نوازا۔انہوں نے

شادی نہیں کی اور اپنی زندگی کا سفر تنہا ہی گزارا اوراپنی زندگی کو ادب، صحافت اور تعلیم کی

نذر کردیا۔ ان کی تحریریں اہل علم کے لیے تہذیب و تمدن اور تاریخ کی آگاہی کا سبب بھی بنتی رہیں۔

وہ طویل علالت کے بعد 21اگست 2007 کو دارفانی سے کوچ کر گئیں۔

قرۃالعین حیدر

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے توشیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں