61

مجھے بلانے کا مقصد نقصان پہنچانا تھا، مریم نواز

Spread the love

مقصد نقصان پہنچانا تھا

لاہور(صرف اردو آن لائن نیوز) پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر اور سابق وزیر اعظم میاں

محمد نوقاز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے کہا ہے کہ نیب کے سامنے ریاستی دہشت گردی اور

جبر کا مظاہرہ کرتے ہوئے نہتے کارکنوں پر تشدد کیا گیا اور گاڑی پر پتھر برسائے گئے۔ نیب کی

طرف سے آج بلانے کا مقصد نقصان پہنچانا تھا۔آج جس حکومتی دہشت گردی کا میں نے مظاہرہ کیا

ہے وہ میرے لیے یا مسلم لیگ (ن)کے لیے نہیں بلکہ اس جعلی اور سلیکٹڈ حکومت کے لیے لمحہ

فکریہ ہے، نیب کے دفتر کے سامنے ریاستی دہشتگردی اور جبر کا مظاہرہ کیا گیا، پر امن نہتے

کارکنوں پر تشدد کیا گیا، آنسو گیس اور پتھر لگنے سے کارکن زخمی ہوئے،گاڑی پر پتھر برسائے

گئے، مجھے گھر سے بلانے کا واحد مقصد نقصان پہنچاناتھا،بلٹ پروف گاڑی نہ ہوتی تو پتھر

مجھے لگتے،پولیس یونیفارم میں لوگوں نے پتھر مارے، پتھر لگنے سے مجھے ہیڈ انجری بھی

ہوسکتی تھی، مجھے واپس جانے کیلئے پیغام بھی آئے، مجھے کہا گیا بی بی واپس چلی جائیں، نیب

والوں نے دروازہ نہیں کھولا، چھپ کر بیٹھے رہے، نیب کے دروازے کے باہر کھڑی رہی اور کہا

مجھ سے جواب لے لیں،نیب کا کال لیٹر مجھے پرسوں موصول ہوا، کہا گیا شاید میں نے کوئی زمین

خریدی ہے، کاللیٹر میں مجھ پر کوئی الزام نہیں لگایا گیا۔ نیب پیشی کی منسوخی کے بعد ماڈل ٹائون

سیکرٹریٹ میں شاہد خاقان عباسی، رانا ثنااللہ خان، مریم اورنگزیب،پرویز رشید، دانیال عزیز، طلال

چوہدری، شائستہ پرویز ملک، محمد زبیر، ملک پرویز ، خواجہ عمران نذیر، چوہدری شہباز، غزالی

سلیم بٹ، فیصل کھوکھر، ثانیہ عاشق، سلمی بٹ اور شیزہ خواجہ سمیت دیگر کے ہمراہ پریس

کانفرنس کرتے ہوئے مریم اورنگزیب نے کہا کہ آج جس طرح پر امن اور نہتے کارکنان پر پتھر

برسائے گئے،اسپرے کیا گیا ،آنسو گیس پھینکی گئی میں اس کی بھرپور مذمت کرتی ہوں اور مسلم

لیگ(ن)کے جو کارکنان میرے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے کے لیے جبر کا سامنا کرتے ہوئے وہاں

کھڑے رہے انہیں سلام پیش کرتی ہوں۔انہوں نے کہا کہ جب میری گاڑی نیب دفتر کے نزدیک پہنچی

کسی بھی جماعت میں ہوں، وفاداری ملک کے ساتھ ہوگی، فواد چوہدری

اس وقت مجھے معلوم نہیں تھا کہ دوسری جانب عوام کا سمندر موجود ہے تو اچانک آنسو گیس کی

شیلنگ شروع ہوگئی جس سے گاڑی کے ساتھ موجود لوگ دور ہٹ گئے اور گاڑی اکیلی ہوگئی۔اسی

اثنا میں نیب دفتر کے بالکل سامنے رکاوٹوں کے پیچھے سے میری گاڑی پر پتھرا ئوہوا، میری گاڑی

بلٹ پروف گاڑی تھی اس کے باجود ونڈ اسکرین ٹوٹ گئی اور سکیورٹی گارڈز نے بغیر کسی

حفاظتی اشیا ء کے گاڑی کے سامنے گھڑے ہوکر میری حفاظت کی۔انہوں ے کہا کہ نیب کی جانب

سے جاری اعلامیے میں میڈیا کے ذریعے یہ تاثر دینے کی کوشش کی گئی کہ جو زمین میں نے

خریدی تھی اس زمین پر قبضہ کیا تھا لیکن نیب کے طلبی کے نوٹس میں کوئی ایسا الزام موجود نہیں

تھا۔نیب کی جانب سے جاری نوٹس پڑھ کر سناتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ اس میں الزام کوئی نہیں

ہے، بہت مبہم رکھا گیا ہے کیونکہ مجھے بلانا مقصود تھا اور اب میں یہ کہنے میں حق بجانب ہوں

کہ مجھے بلانے کے پیچھے مجھے نقصان پہنچانا مقصود تھا کیونکہ میرے ساتھ جو سلوک کیا گیا،

میں نے پاکستان کے 72سال میں یہ ہوتے نہیں دیکھا۔

مقصد نقصان پہنچانا تھا

اپنا تبصرہ بھیجیں