37

دبئی کے معروف بینک کی فیصد25 برانچ کرونا نگل گیا

Spread the love

راس الخیمہ (صرف اردو ڈاٹ کام آن لائن نیوز)(دبئی معروف بینک کرونا) کورونا کی وبا سے

ہونے والی عالمی معیشت کی تباہی سب کے سامنے ہے، جس کے باعث بہت سے معروف بینک

بھی خسارے کا شکار ہو رہے ہیں۔اماراتی بینک بھی ان حالات میں شدید مشکلات کا شکار ہیں۔

دْبئی کے ایمریٹس NBDاور ابوظبی کمرشل بینک کی جانب سے سینکڑوں ملازمین کو نکالنے کے بعد اب

ایک اور اماراتی بینک نے اپنی 25 فیصد برانچز بند کرنے کا اعلان کیا گیا ہے جس کے نتیجے

میں متعدد ملازمین بھی نوکریوں سے فارغ ہو جائیں گے۔

حکومت بے بس،لاہور میں سادہ نان کی قیمت 18 سے 20 روپے تک پہنچ گئی

دی نیشنل بینک آف

راس الخیمہ (RAK Bank)کی انتظامیہ نے اعلان کیا ہے کہ 3 ستمبر سے مملکت کی 25 فیصد برانچز بند کر دی جائیں گی۔ جن میں سے 6 برانچز دْبئی کے علاقوں الراس، مڈ رِف، میرینا ڈائمنڈ، القوز

انڈسٹریل، دْبئی انویسٹمنٹ پارک اور جبلِ علی فری زون میں بند کی جا رہی ہیں۔

اس کے علاوہ شارجہ کی انڈسٹریل ایریا ، ابوظبی کی الجزیرہ برانچ اور خورفقان کی ایک، ایک

برانچ بند کی جائے گی۔انتظامیہ کے مطابق مملکت کے مختلف علاقوں میں مجموعی طور پر 9 برانچز

بند کی جا رہی ہیں، جس کی وجہ ڈیجیٹل بینکنگ کا بڑھتا ہوا رحجان ہے۔ راس الخیمہ بینک کی

مملکت میں کْل 36 برانچز ہیں، جن میں سے 9 برانچز بند کرنے کے بعد صرف 27 برانچز رہ

جائیں گی۔ واضح رہے کہ ADCB نے بھی چار سو ملازمین کی نوکریاں ختم کرنے کا اعلان کیا ہے

جن میں کنزیومر بزنس کے ملازمین اور انتظامیہ کے سینئر عہدے دار بھی شامل ہیں۔

اگر آپ اردو تلفظ درست کرنا چاہتے ہیں تو یہاں کلک کریں

اس کے علاوہ 20 برانچز بند کرنے پر بھی غور کیا جا رہا ہے۔

بینک کو NMC Health کے معاملے میں بھی 3.6 ارب درہم کے خسارے کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

بینک کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ملازمین کو کورونا کی وجہ سے پیدا ہونے والے خراب حالات

کی وجہ سے نہیں، بلکہ ان کی خراب کارکردگی کی وجہ سے نکالا جا رہا ہے۔

ہر سال اضافی ملازمین کی نوکریاں ختم کرنا معمول کی بات ہے۔ایک اندازے کے

مطابق اماراتی بینک رواں سال اپنے 10 سے 15 فیصد ملازمین کو نوکریوں سے نکال سکتے ہیں۔

اس سے قبل معروف بینک ایمریٹس NBD نے اپنے800 ملازمین کو نوکریوں سے فارغ کرنے کا اعلان کیا تھا۔

ایمریٹس NBD دوبئی کا سب سے بڑابینک ہے۔بینک کے ترجمان نے بتایا کہ مستقبل میں بینک کی ضروریات

ور اخراجات کو مدنظررکھتے ہوئے

اس کے سٹاف میں کمی کی جا رہی ہے۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ کورونا کی عالمی وبا نے اماراتی

فنانشل سیکٹر اور بینکنگ شعبے کو بھی معاشی بحران سے دوچار کیا ہے۔

ایمریٹس NBD بھی حالیہ بحران سے متاثرہوا ہے جس کے بعد اس کے مختلف آپریشنز اور سٹاف میں کمی کی جا رہی ہے۔

دبئی معروف بینک کرونا

اپنا تبصرہ بھیجیں