134

دیکھتی آنکھوں سنتے کانوں کو طارق عزیز کا آخری سلام

Spread the love

لاہور(صرف اردو آن لائن نیوز) طارق عزیز آخری سلام

معروف ٹی وی کمپیئر طارق عزیز84برس کی عمر میں انتقال کر گئے،طارق عزیز کچھ

عرصہ سے علیل تھے،طبیعت زیادہ بگڑنے پرگزشتہ روز خالق حقیقی سے جا ملے،لاہور

میں نماز جنازہ ادا کردی گئی۔ طارق عزیز 1936 میں جالندھر میں پیدا ہوئے، پاکستان قائم

ہوا تو خاندان کے ہمراہ پاکستان منتقل ہو گئے، ابتدائی تعلیم ساہیوال میں حاصل کی۔ پاکستان

ریڈیو اور ٹیلی ویژن سے کیرئیر شروع کیا۔ 1964 میں جب پی ٹی وی کا آغاز ہوا تو پہلے

مرد انائونسر ہونے کا اعزاز ان کے حصے میں آیا۔ 1975 میں شروع کئے جانے والے ان

کے سٹیج شو نیلام گھر نے انہیں شہرت کی بلندیوں پر پہنچا دیایہ پروگرام کئی دہائیاں تک

پنجاب حکومت نے بھی صوبائی ملازمین پر بجلی گرادی

جاری رہا ۔نیلام گھر کا شہرہ آفاق جملہ ’’دیکھتی آنکھوں سنتے کانوں کو میرا سلام ‘‘زبان

زد عام رہا۔نیلام گھر کو بعدازاں بزمِ طارق عزیز شو کا نام دیا گیا۔انہوں نے”انسانیت”، “ہار

گیا انسان” سمیت کئی فلموں میں کام کیا اور شاندار اداکاری پر 2 نگار ایوارڈ جیتے۔کارزار

سیاست میں بھی اترے اور رکن قومی اسمبلی منتخب ہوئے۔ طارق عزیز شاعر بھی تھے

اور لکھاری بھی، ان کے کالموں کا ایک مجموعہ ’’داستان‘‘ کے نام سے اور پنجابی

شاعری کا مجموعہ کلام ’’ہمزاد دا دکھ‘‘ شائع ہو چکا ہے۔طارق عزیز نے اپنی وصیت میں

لکھا تھا کہ چونکہ ان کی کوئی اولاد نہیں اس لئے وہ اپنے تمام اثاثے و املاک پاکستان کے

نام کرتے ہیں۔صدر مملکت عارف علوی، وزیراعظم اور دیگر سیاسی شخصیات نے طارق

عزیز کی وفات پر افسوس کا اظہار کیا۔ عمران خان نے کہا طارق عزیز کی وفات پر

افسردہ ہو۔صدر پاکستان مسلم لیگ (ن) اور قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے طارق عزیز

کے انتقال پر رنج وغم اور افسوس کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا ریڈیو، ٹی وی، فلم کے ہر

میڈیم پر طارق عزیز نے اپنی قابلیت اور صلاحیتوں کا لوہا منوایا، وہ علم و ادب اور فنون

لطیفہ سے محبت رکھنے والے انسان تھے۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے بھی طارق

عزیز کے انتقال پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا طارق عزیز نے ٹی وی

کمپیئرنگ کے فن میں نئی جہت متعارف کرائیں، طارق عزیز کا منفر انداز ان کی وجہ

شہرت تھا۔عثمان بزدار کا کہنا تھا طارق عزیز اپنے ادبی ذوق کی وجہ سے اپنی ذات میں

انجمن تھے ۔وفاقی وزیر اطلاعات و سینیٹر شبلی فراز نے بھی معروف آرٹسٹ اور طارق

عزیز شو کے بانی طارق عزیز کی وفات پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا۔ ان کا کہنا

تھا طارق عزیز نے دہائیوں تک پی ٹی وی کے ذریعے پاکستانی عوام کو تعلیم و تفریح

فراہم کی۔شبلی فراز نے کہا کہ طارق عزیز لوگوں کے دل میں ہمیشہ زندہ رہیں گے۔

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا نے طارق عزیز کے اہل خانہ سے تعزیت اور ہمدردی کا اظہار

کیا۔ انہوں نے کہا مرحوم ایک ہمہ جہت شخصیت کے مالک تھے۔وزیرِ اطلاعات پنجاب

فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا طارق عزیز نے نیلام گھر پروگرام کے ذریعے کئی نسلوں

کو اپنی ثقافت اور ادب سے روشناس کرایا، ملک میں آرٹ، ثقافت اور ٹیلیویڑن کیلئے ان

کی خدمات کبھی فراموش نہیں کی جا سکتی۔مسلم لیگ (ق)کے صدر و سابق وزیراعظم

چودھری شجاعت حسین، سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی، مونس الٰہی ایم این اے،

سیکرٹری جنرل طارق بشیرچیمہ، جنرل سیکرٹری پنجاب کامل علی آغا اور سینئر نائب

صدر پنجاب چودھری سلیم بریار نے معروف ٹی وی کمپیئر اور سابق ایم این اے طارق

عزیز کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے۔ چودھری شجاعت حسین نے کہا کہ

مرحوم طارق عزیز ہماری پارٹی کے اہم رکن اور میرے دیرینہ دوستوں میں سے تھے۔

چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ مرحوم طارق عزیز سے ہمارے خاندان کا بہت پرانا تعلق

تھا، یادیں ہمیشہ زندہ رہیں گی، فن کی دنیا اور سیاست کیلئے ان کی خدمات کو کبھی

فراموش نہیں کیا جا سکتا۔ سینئر وزیر پنجاب عبدالعلیم خان،تحریک انصاف سنٹرل پنجاب

کے صدر اعجاز احمد چودھری،مسلم لیگ(ن)کے رکن پنجاب اسمبلی ملک سیف الملوک

کھوکھرپیپلز پارٹی کی سابق رکن قومی اسمبلی بیگم بیلم حسنین ،مسابق رکن قومی اسمبلی

بیگم مہنازرفیع،تحریک انصاف پنجاب کی شمسہ علی،پی ٹی آئی سنٹرل پنجاب ویمن ونگ

کی سیکرٹری رضوانہ غضنفرنے بھی کمپیئر طارق عزیز کے انتقال پر گہرے افسوس کا

اظہار کیا ہے۔

طارق عزیز آخری سلام

طارق عزیز آخری سلام

اپنا تبصرہ بھیجیں