121

مقبوضہ وادی میں مزید 7کشمیری شہید

Spread the love

سرینگر،راولپنڈی (صرف اردو آن لائن نیوز) مزید 7کشمیری شہید

مقبوضہ کشمیر قابض بھارتی افواج نے ایک روز میں 7 کشمیریوں کو شہید کردیا، جبکہ لائن آف کنٹرول (ایل او سی)پر مختلف سیکٹرز میں شہری آبادیوں پر سیز فائر کی ایک بار پھر خلاف ورزی کرتے ہوئے بلااشتعال فائرنگ اور گولہ باری کی ، جس کے نتیجہ میں ایک خاتون شہید اور بچی شدید زخمی ہو گئی ،

پاک فوج نے منہ توڑ کارروائی کر کے دشمن کی گنوں کو خاموش کرادیا، دفتر خارجہ نے بھارتی ناظم الامور کو طلب کر کے بھارتی فوج کی تسلسل کیساتھ جاری اشتعال انگیز ی اور بے گناہ شہریوں کی شہادتوں کی شدید مذمت کی اور تفصیلی احتجاج پر مبنی مراسلہ بھی تھما دیا۔

پاکستان، بھارت جیسے ملکوں میں کورونا کے کم کیسز آنا غیر یقینی ، بل گیٹس

تفصیلات کے مطابق کشمیر میڈیا سروس کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گزشتہ روزقابض بھارتی فوج نے ضلع کلگام کے علاقے میں محاصرے کے دوران گھر گھر تلاشی کی آڑ میں 24 گھنٹوں کے اندر مزید 7کشمیری نوجوانوں کو فائرنگ کرکے شہید کردیا۔رپورٹ کے مطابق تین کشمیری نوجوانوں کو ضلع کلگام جبکہ قبل ازیں بھارتی فوج نے ضلع کلگام ہی کے علاقے استھل میں 4 کشمیری نوجوانوں کو شہید کیا، جس کے بعد 24گھنٹوں سے کم وقت میں شہید کشمیر یو ں کی تعداد7 ہوگئی ۔

رپورٹ میں بتایاگیا ہے کہ قابض بھارتی فوج 5 روز میں اب تک 16 کشمیری نوجوانوں کو شہید کرچکی ہے ۔دوسری طرف پیر کے روزدن دس بجے کے قریب لائن آف کنٹرو ل پر تتہ پانی گوئی سیکٹر میں واقع گائوں رڈ میں ایک خاتون یاسمین اختر زوجہ شیراز احمد اپنے کھیت میں گھاس کاٹ کر رہی تھی، اُسے بھارتی فوج نے ٹارگٹ فائرنگ کا نشانہ بنایا جس کے نتیجہ میں گولی اسکے سینے میں لگی اور وہ موقع پر شہید ہوگئی ،

واقعہ کے بعد علاقہ میں خوف وہراس پیدا ہوگیا، ادھر کھوئی رٹہ سیکٹر لائن آف کنٹرول کے سرحدی گائوں چتر ، بھینسہ گالہ ، ججوٹ بہادر میں بھی بھارتی فوج نے سول آبادی کو نشانہ بناتے ہوئے سحری کے وقت بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری کی جس سے ادیبہ ظہیر ولد ظہیر احمد قوم مغل ساکن چتر زخمی ہو گئی جس کو فوری طور پر ہسپتال پہنچایا گیا ،

جہا ں ابتدائی طبی امداد کے بعد زخمی ادیبہ کو ڈسٹر کٹ ہیڈ کوآرٹر ہسپتال کوٹلی ریفر کر دیا گیا ،پاک فوج نے بھارت کو منہ تو ڑ جواب دیتے ہوئے ا ن کی پوسٹوں کا نشانہ بنایا جس کے بعد بھارتی گنیں خاموش ہو گئیں ۔ پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر)کے مطابق بھارتی فوج کی جانب سے ایل او سی پر بلاا شتعا ل فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ جاری ہے۔آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی فوج نے کھوئی رٹہ اور جندروٹ سیکٹرز پر بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری کی اور خود کار ہتھیاروں اور راکٹوں سے جان بوجھ کر شہری آبادیوں کو نشانہ بنایا۔

ترجمان پاک فوج کے مطابق بھارتی فوج کی فائرنگ اور گولہ باری سے36سالہ خاتون یاسمین شہید ہوگئی جس کا تعلق گائوں رڈ سے تھا۔ بھارتی فائرنگ سے گائوں موہرہ چھترکی ایک 8سال کی بچی ادیبہ ظہیر بھی زخمی ہوئی ،جسے طبی امداد کیلئے ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

ترجمان پا ک فوج میجر جنرل بابر افتخار نے واضح کیا کہ مودی سرکار ہندتوا اور سیفران دہشت گردی کے نظریے پر عمل پیرا ہے۔ بھارتی فوج نے 2019ء میں سب سے زیادہ 3351 مرتبہ جنگ بند ی معاہدے کی خلاف ورزی کی جس سے 52 افراد شہید اور 261 زخمی ہوئے۔

کنٹرول لائن پر فائرنگ واقعے کے بعد بھارتی ناظم الامور کو دفتر خارجہ طلب کرکے احتجاجی مراسلہ دیا گیا۔ مرا سلے میں کہا گیا کہ بھارتی فورسز نے پیر کے روز کھوئی رٹہ اور جنڈروٹ سیکٹرز میں بلا اشتعال فائرنگ کی ، کنٹرول لائن پر آبادی کو نشانہ بنایا۔ بھارتی فائرنگ کے نتیجے میں ایک خاتون شہید اور نو سالہ بچی شدید زخمی ہوئی۔

مزید 7کشمیری شہید

اپنا تبصرہ بھیجیں