عملیہ جالینوس 220

طب یونانی کے گمشدہ خزانے(عملیہ جالینوس)

Spread the love

نام کتاب : عملیہ ٔ جالینوس۔

مولّف:اشرف ُالحکماء حکیم آشفتہ لکھنوی پروفیسر نظامیہ طبیہ کالج، حیدرآباد۔

تبصرہ نگار: حکیم محمد شیراز، لکچرر شعبہ ٔ معالجات، کشمیر یونیورسٹی، سری نگر، کشمیر۔

کتاب’’عملیۂ جالینوس‘‘ مطالب کے اعتبار سے بہت بلند اور ندرت کی حامل ہے۔ہر مرض کی کیفیت، طبیعت، مرض کی حالت، نبض اور اس کے قارورہ کا حال ، احکام فصد و و استفراغ اور غذا وغیرہ اور جن ادویہ سے اس مرض کا ازالہ ہو سکتا ہے، اس کو ایک نقشہ کی صورت میں، جو خود جالینوس کا مرتبہ ہے، بیان کیا گیا ہے۔ نیزاس طرح واضح کر کے بتایا ہے کہ (بقول حکیم مقصود علی خاں صاحب، ناظم سر رشتۂ طبابت سرکار عالی دکن) اگر ایک طالب علم اس ارجوزہ کو حفظ کر لے تو طب کی بڑی بڑی کتابوں سے بے نیاز ہو جائے۔ اس سلسلہ میں جو نسخے بتائے گئے ہیں وہ معمولات جالینوس کے علاوہ مشہور اساتذۂ فن مثلاً حکیم اجمل خاں دہلوی، حکیم بنا صاحب اور خاندان علوی خاں کے ایسے مجربہ نسخے ہیں جو کبھی صدری کہلاتے تھے مگر آج پیش نظر خاص و عام ہیں۔کتاب کی ابتدا ء میں عربی میں حکیم عبد المجید صاحب فرنگی محلی اور حکیم اجمل خان دہلوی کے ملفوظات نقل کیے گئے ہیں۔(عملیہ جالینوس حکیم شیراز)

نام کتاب :الجامع المفردات الادویہ و الاغذیہ(اردو ترجمہ)

حکیم صاحب کی محنت قابل داد ہے۔مولوی حکیم سید علی صاحب آشفتہ لکھنؤ کے خاندان اجتہاد سے تعلق رکھتے ہیںاور بحر ُالعلوم مولانا سید دلدار علی صاحب، مجتہد صاحب ، عماد الاسلام و منتہی الافکار کے پڑ پوتے اور سلطانُ العلماء مولوی سید محمد صاحب کے منجلے بھائی ملک ُ العلماء مولوی سید حسن صاحب مجتہد کے پوتے ہیں۔

شمس ُ العلماء مولوی عبدُ المجید صاحب فرنگی محلی و مولانا عبد الباری صاحب فرنگی محلی کے آگے زانوئے تلمذ تہہ کیا اور پھر طب کی تکمیل کے واسطے ہندوستان کے مایہ ناز فرد فرید مجتہد فن طب مسیح الملک حکیم اجمل خاں ؒ کی خدمت میں برسوں رہے اور سفر و حضر میں حضرت مرحوم سے اکتساب علم کیا۔عرصہ دراز تک لکھنؤ جیسے مرکز علم و حکمت میں کامیاب مطب کرنے کے بعد سلطنت آصفیہ کے جوہر شناس نے ان کا انتخاب نظامیہ طبیہ کالج کی پروفیسری کے واسطے کیا۔

شادی کرنے پر ماں قتل ہو گئی۔۔۔۔۔۔۔۔روشن خیال لڑکی گھر سے بھاگ گئی

ضرورت اس بات کی ہے کہ دور حاضر کے محققین ، طلبا اور اساتذہ کواس کتا ب کی اہمیت سے آگاہ کیا جائے تاکہ دور حاضر کے طبی مسائل کو اس کتا ب کی روشنی میں حل کیا جا سکے نیز جدید تحقیقات کر کے دور حاضر کے تقاضوں کو پورا کیا جاسکے۔

عملیہ جالینوس حکیم شیراز عملیہ جالینوس حکیم شیراز عملیہ جالینوس حکیم شیراز

اپنا تبصرہ بھیجیں