گولیمار میں رہائشی عمارت منہدم 14 جاں بحق

Spread the love

5 افراد کو ملبے سے نکال لیا ہے، عباسی شہید اسپتال منتقل ، زخمیوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔حکام

کراچی(نامہ نگار) شہر قائد میں رضویہ سوسائٹی کے قریب گولیمار نمبر 2 میں تین منزلہ رہائشی عمارت گرگئی۔عمارت کا خستہ حال گراؤنڈ فلور مکمل طور پر بیٹھ گیا جس کے باعث پوری عمارت نیچے آگری۔علاقہ مکینوں کا کہنا ہیکہ بلڈنگ میں چار خاندان رہائش پذیر ہیں جس کے باعث ملبے تلے کئی افراد کے دبے ہونے کا خدشہ ہے۔واقعے کی اطلاع ملتے ہی ریسکیو اہلکار موقع پر پہنچ گئے اور امدادی کارروائیاں شروع کردیں جب کہ علاقہ مکین بھی امدادی کارروائیوں میں حصہ لے رہے ہیں اور سریے کاٹ کر ملبے کو ہٹایا جارہا ہے، اس کے علاوہ ریسکیو آپریشن کے لیے بھاری مشینری بھی طلب کی گئی ہے۔

ماحولیاتی آلودگی کیس: سپریم کورٹ برہم

عمارت کا خستہ حال گراؤنڈ فلور مکمل طور پر بیٹھ گیا جس کے باعث پوری عمارت نیچے آگری

ریسکیو حکام نے اب تک 5 افراد کو ملبے سے نکال لیا ہے جنہیں عباسی شہید اسپتال منتقل کیا گیا ہے، زخمیوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔اسپتال ذرائع نے واقعے میں 2 افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق کی ہے جن میں ایک خاتون شامل ہیں۔گولیمار واقعے کے 5 زخمی اسپتال لائے گئے جن میں سے14 افراد جاں بحق ہوگئے جب کہ دیگر زخمیوں اور ایک جاں بحق شخص کا تعلق فیڈرل بی ایریا کے واقعے سے ہے جہاں عمارت کی گیلری گری۔ریسکیو حکام نے بتایا کہ عمارت پھول والی گلی میں گری اور اس عمارت کو فاطمہ بلڈنگ کے نام سے جانا جاتا ہے، عمارت کے پشتے کمزور تھے جو عمارت کے گرنے کی وجہ بتائی جارہی ہے، عمارت گرنے سے برابر والی عمارت کو بھی نقصان پہنچے ہے اس لیے اس عمارت کو بھی خالی کرایا جارہا ہے۔

واقعے کی اطلاع ملتے ہی ریسکیو اہلکار موقع پر پہنچ گئے اور امدادی کارروائیاں شروع کردیں

ریسکیو حکام کا کہنا ہیکہ گلی تنگ ہونے کہ وجہ سے امدادی کارروائیوں میں مشکلات کا سامنا ہے جس کے باعث پچھلی گلی سے ایمبولینسز کو لایا جارہا ہے۔علاقہ مکینوں کا کہنا ہیکہ بلڈنگ زیادہ پرانی نہیں اور اسے 3 سے 4 سال پہلے ہی تعمیر کیا گیا تھا۔

گولیمار رہائشی عمارت منہدم

گولیمار رہائشی عمارت منہدم

ہمیں فالو کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں