31

کرپشن کا نیا نظام پٹواری، گرداور تحصیلداروں کی چاندی حکومتی نظام ٹھپ

Spread the love

کرپشن کا نیا نظام پٹواری

کمپیوٹرائزڈ فردوں کے حصول کے بعد کرپشن نے نیا رخ اختیار کرلیا

اراضی ریکارڈ سنٹر سے جاری کی جانیوالی فرد کیساتھ ایک پرفارما تھما دیا جاتا ہے

پرفارما کو پٹواری، گرداوار، تحصیلدار پر کرتا ہے تب ہی رجسٹرار صاحب بیان قلمبند کرتے ہیں

جو فرد پہلے پٹواری کے پاس سے 500 روپے میں ملتی تھی اب وہی فرد کا پرفارما ہمیں ہزاروں میں ملتا ہے ،سائلین

حکومت اس روایت کو ختم کرے تاکہ عوام کو ریلیف مل سکے یہ لوگ عوام کیلئے پریشانی کا موجب بنے ہوئے ہیں،مطالبہ

سرگودھا(عاصم سعیدی سے)کرپشن کا نظام پٹواری

کمپیوٹرائزڈ فردوں کے حصول کے بعد کرپشن نے نیا رخ اختیار کرلیااراضی ریکارڈ سنٹر سے جاری کی جانیوالی فرد کیساتھ ایک پرفارما تھما دیا جاتا ہے جس کو پٹواری، گرداوار، تحصیلدار پر کرتا ہے تب ہی رجسٹرار صاحب بیان قلمبند کرتے ہیں سائلین کا کہنا ہے کہ جو فرد پہلے پٹواری کے پاس سے 500 روپے میں ملتی تھی اب وہی فرد کا پرفارما ہمیں پٹواری کو 2 ہزار، گرداوار 5 سو روپے اور پھر تحصیلدار کا نائب قاصد یا دیگر عملہ 500 سے 1000 روپے وصول کرتا ہے

یہ بھی پڑھیں:فرسودہ اور بوسیدہ نظام سے عوام کو کچھ نہیں ملا: عثمان بزدار

اس طرح یہ پرفارما ہمیں 3000 سے 3500 روپے میں ملتا ہے کیا یہی نیا پاکستان ہے؟ شہریوں نے وزیر اعظم عمران خان، وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار، چیف سیکرٹری پنجاب، کمشنر سرگودھا ڈویژن، ڈپٹی کمشنر سرگودھا، اسسٹنٹ کمشنر سرگودھا سے مطالبہ کیا ہے کہ اس روایت کو ختم کیا جائے تاکہ عوام کو ریلیف مل سکے یہ لوگ عوام کیلئے پریشانی کا موجب بنے ہوئے ہیں

یاد رہے کہ برسر اقتدار آنے سے پہلے موجودہ حکومت نے اس چیز پر زور دیا تھا کہ کرپشن کا جڑ سے خاتمہ کریں گے لیکن ڈیڑھ سال گذرنے کے باوجود حالات جوں کے توں ہیں اور کرپشن بجائے کم ہونے کے مزید بھ گئی ہے۔ ارباب اختیار کو اس طرف بھی توجہ دینے کی ضرورت ہے

کرپشن کا نظام پٹواری

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں