کرونا ڈاکٹر ظفر مرزا 91

موسمیاتی تبدیلی کے انسانی زندگی پر اثرات کا جائزہ لینے کے لیے کمیٹی کی تشکیل

Spread the love

اسلام آباد(مہتاب پیرزادہ سے)موسمیاتی تبدیلی انسانی زندگی

وزیر اعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا کی زیر صدارت اجلاس ہوا جس میں وزارت قومی صحت اور وزارت موسمیاتی تبدیلی کے ماہرین نے شرکت کی۔ اس موقع پر ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا پاکستان میں موسمی تغیرات کی وجہ سے انسانی صحت پر جو اثرات مرتب ہوں گے اس حوالے سے ماہرین کی ایک کمیٹی تشکیل دے دی ہے جو اس بات پر غور و خوض کرے گی کہ موسمیاتی تبدیلی کا انسانی صحت پر کیا اثرپڑے گا۔

اس ایریا پر ابھی تک موسموں کے صحت پر اثرات کے حوالے سے کوئی توجہ نہیں دی گئی یہ کمیٹی قومی سطح پر مشاہدہ کرے گی کہ موسمیاتی تبدیلی کے انسانی صحت پرکیا اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔ کمیٹی ایسی پالیسی مرتب کرے گی جس کے ذریعے ہم ان بدلتے ہوئے موسموں کے ساتھ اپنی پالیسیوں اور اپنی طرز زندگی میں ایسی تبدیلیاں لا سکیں تاکہ ہم موسمی تبدیلیوں کی وجہ سے نقصان اٹھانے کی بجائے ان سے فائدہ اٹھا سکیں۔

یہ بھی پڑھیں:آزاد کشمیر سمیت ملک بھر میں بارش و برف باری سے مختلف حادثات، 41 جاں بحق

ماہرین کی پیشنگوئی کے مطابق اگر ہم نے کوئی موثر اقدامات نہ کئے تواس صدی کے آخر تک اس گلوبل وارمنگ کے نتیجے میں ہمارا ٹمپریچر 6 ڈگری سینٹی گریڈ اوپر چلا جائے گا جس طرز سے موسمیاتی تبدیلیاں رونما ہو رہی ہیں وہ پاکستان میں صحت عامہ کے لیے بڑا خطرہ ہیں اور پاکستان دنیا میں موسمیاتی تبدیلیوں کے خطرات سے دوچار ممالک میں ایک ہے۔ اس کے بارے میں ذرا سوچنا مشکل ہے کہ یہ کس طرح کی زندگی ہو گی اس لیے ہم نے یہ اقدام اٹھایا ہے۔

اس ایکسپرٹ کمیٹی میں وزارت موسمیاتی تبدیلی سے بھی ماہرین لیے گئے ہیں اور اس حوالے سے اہم کردار رکھنے والے اداروں کو بھی شامل کیا گیا ہے۔ اگلے چند مہینوں میں کمیٹی اپنی سفارشات پیش کرے گی جس کی روشنی میں ضروری اقدامات اٹھائے جائیںگے۔

موسمیاتی تبدیلی انسانی زندگی

اپنا تبصرہ بھیجیں