کرونا ڈاکٹر ظفر مرزا 88

ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کا اہم قدم، ڈریپ میں شفافیت کے لیے نیا سسٹم متعارف، ڈاکٹر ظفر مرزا

Spread the love

ادویہ کی رجسٹریشن اور لائسنسنگ کے لیے ڈریپ میں آن لائن سسٹم کا اجراء

افسران کے صوابدیدی اختیارات کا خاتمہ کرنے کے لیے آٹومیشن کا سسٹم متعارف

اسلام آباد (مہتاب پیرزادہ سے)وزیر اعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا کی زیر صدارت ایک اعلی سطحی اجلاس کا انعقاد ہوا اور ڈریپ کی آٹو میشن کے لیے متعارف کئے گئے سسٹم کا اجراء کرتے ہوئے کہا کہ ادویہ کی رجسٹریشن اوران کے بنانے والی کمپنیوں کی لائسنسنگ میں شفافیت کی ضرورت کو محسوس کرتے ہوئے یہ سسٹم بنایا گیا ہے۔ ڈریپ میں بڑے پیمانے پر اصلاحات کی جا رہی ہیں اور اسے ماڈل اتھارٹی بنایا جا رہا ہے۔ ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا معیاری ادویات کی فراہمی ،صحت کا شعبہ ہماری اولین ترجیح ہے اور یونیورسل ہیلتھ کوریج پر فوکس ہے۔

انہوںنے ڈریپ کواس کے کامیاب اجراء پر مبارکباد پیش کی اور کہا کہ گڈ گورننس میں شفافیت، جوابدہی، اعلی کارکردگی اور سٹیک ہولڈرم کی شمولیت کے لوازمات پر سختی سے عمل پیرا ہونے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ شفافیت کو یقینی بنانے کے لیے انفارمیشن منیجمنٹ سسٹم بہترین استعمال ہے۔ PIRIMS ڈریپ کے افسران کی کارکردگی بڑھائے گی اور تمام کام وقت پر نمٹانے میں مدد دے گا۔

اس سے عالمی معیار کے مطابق ادویہ کی تیاری اور رجسٹریشن میں معیار کا قائم رکھنے میں مددملے گی۔ اس موقع پر سی ای او ڈریپ نے کہا کہ اسٹیک ہولڈرز کے اس اجلاس کا اہتمام لوگوں کو یہ بتانے کے لیے کیا گیا ہے کہ ڈریپ ایک شفاف ماحول کی جانب گامزن ہے۔ کام کرنے کے معیاری طریقہ کار سے کسی بھی قسم کے انحراف کو کم کرنے کے لیے ٹائم لائنز کا سسٹم متعارف کرایا گیا ہے۔ انہوںنے مزید کہا کہ یہ کسی بھی قسم کے صوابدید کی اجازت نہیں دے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں