136

نواز خاندان بہت کنجوس ہے، حمزہ شہباز کو ضمانت کے طور پر پہلے بھی چھوڑ کر گئے تھے: شیخ رشید

Spread the love

ڈیل ہوئی نہ ڈھیل ،حکومت اور نواز شریف دونوں کی عزت رہ گئی

سیاست اور جنگ میں ٹائمنگ بہت اہم ہوتی ہے، ہائی کورٹ نے نواز شریف کو جانے کی اجازت دی

نوازشریف نے حلفیہ بیان دیا کہ چار ہفتے بعد واپس آئیں گے، نواز خاندان سمجھتا ہے کفن میں جیبیں لگی ہیں

مولانا کو جانا ہی تھا، یہ لوگ کسی کے کہنے پر واپس نہیں گئے، اب پاکستان کی سیاست میں خوشگوار دور آنیوالا ہے

تمام ممالک کا شکریہ جنہوں نے پاکستان ریلوے کی اسٹیم انجن کی بحالی میں مدد کی،میڈیا سے گفتگو

راولپنڈی (نمائندہ خصوصی) وزیرریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ نواز شریف کے معاملے میں نہ ڈیل ہوئی ہے نہ ڈھیل ،حکومت اور نواز شریف دونوں کی عزت رہ گئی، سیاست اور جنگ میں ٹائمنگ بہت اہم ہوتی ہے، ہائی کورٹ نے نواز شریف کو جانے کی اجازت دی۔ راولپنڈی ریلوے سٹیشن پر سٹیم سفاری ٹرین کے افتتاح کے موقع میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سیاست اور جنگ میں ٹائمنگ بہت اہم ہوتی ہے، کل ہائی کورٹ نے نواز شریف کو جانے کی اجازت دی، عدالت کے سوا کسی کا کوئی کردار نہیں، یہ نوازشریف کی جیت ہے نہ ہماری ہار ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ نواز شریف کہا کرتے تھے کہ میں بھیک نہیں مانگو گا اور کبھی درخواست نہیں دونگا تو اب انہوں نے بیان حلفی پر دستخط کس لیے کیے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس معاملے میں نہ ڈیل ہوئی ہے نہ ڈھیل، عدالت نے دونوں پارٹیوں کی عزت کو بحال رکھا، نوازشریف نے حلفیہ بیان دیا کہ چار ہفتے بعد واپس آئیں گے، نواز خاندان سمجھتا ہے کفن میں جیبیں لگی ہیں، بہت کنجو س ہیں۔ شیخ رشید احمد نے کہا کہ اس سے قبل بھی یہ سعودی عرب گئے تو یہاں حمزہ شہباز کو ضمانت کے طور پر چھوڑ کر گئے تھے۔انہوں نے کہا کہ ہائیکورٹ کا فیصلہ قانون کی جیت ہے، سوشل میڈیا پر ڈیل کا تاثر دیا گیا جو درست نہیں، اگلے 2 سے 3 ماہ اہم ہیں، پھر حالات بہتر ہو جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کا ایجنڈا ہے کسی چور کو نہیں چھوڑنا، اللہ تعالی نوازشریف کو صحت دے، شریف برادران کو باہر بھجوانے میں کسی کا کردارنہیں۔ انہوں نے مولانا فضل الرحمن سے متعلق کہا کہ مولانا نے پوری کوشش کی، کچھ کیا نہیں گلاس توڑا 12 آنے کا، مولانا کو جانا ہی تھا، یہ لوگ کسی کے کہنے پر واپس نہیں گئے، اب پاکستان کی سیاست میں خوشگوار دور آنے والا ہے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر ریلوے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ 100 سال پرانے سٹیم انجن بحال کیے جارہے ہیں، تمام ممالک کا شکریہ جنہوں نے پاکستان ریلوے کی اسٹیم انجن کی بحالی میں مدد کی۔ افتتاح کے بعد پہلے سفر میں سٹیم سفاری ٹرین راولپنڈی ریلوے اسٹیشن سے اٹک کے لیے روانہ ہوئی، اس سفر میں جرمنی، اٹلی، برطانیہ، جاپان، آسٹریلیا کے بلاگرز شامل ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں