وفاقی حکومت کا انسانی ہمدردی کی بنیادوں پر نوازشریف کو علاج کیلئے بیرون ملک بھیجنے کا فیصلہ

Spread the love

حکومت نے ڈاکٹرز کی حتمی رپورٹ کے بعد یہ اہم قدم اٹھانے کا فیصلہ کیا

شریف خاندان گارنٹی دیگا سابق وزیر اعظم صحت بہتر ہوتے ہی وطن واپس آئیں گے، ذرائع

اسلام آباد(وقائع نگار) وفاقی حکومت نے انسانی ہمدردی کی بنیادوںپر سابق وزیر اعظم نوازشریف کو علاج معالجے کیلئے بیرون ملک جانے کی اجازت دینے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ ڈاکٹرز کی حتمی رپورٹ کے بعد جس میں کہا گیا ہے کہ ان کے کچھ اہم ترین ٹیسٹ بیرون ملک ہی ہوسکتے ہیں، حکومت نے یہ اہم قدم اٹھانے کا فیصلہ کیا تاہم اس سلسلے میں وفاقی حکومت شریف خاندان سے گارنٹی لے گی کہ سابق وزیر اعظم صحت بہتر ہوتے ہی وطن واپس آئیں گے۔

مصدقہ ذرائع کے مطابق گزشتہ روز وزیر اعظم عمران خان کوسابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کی صحت سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی گئی اور انہیں بتایا گیا کہ نوازشریف کے پلیٹلیس تاحال بہتر نہیں ہوپارہے ہیں اور انکے معالجین ابھی تک اس بیماری کی کھوج بھی نہیں لگا پائے جسکی وجہ سے نوازشریف کے پلیٹلیس مسلسل بڑھتے اور گرتے جارہے ہیں اس کے لئے انکے کچھ اہم ٹیسٹ بیرون ملک ہونا بہت ضروری ہے۔

ذرائع کیمطابق اس موقع پر وزیر اعظم عمران خان نے نوازشریف کی بہتری کیلئے تمام اقدامات اٹھانے کی ہدایت کی اور کہا کہ انہیں بہتر علاج کی سہولیات فراہم کرنے کیلئے بیرون ملک بھیجنے میں کوئی مضاحکہ نہیں ہے تاہم انکے خلاف تمام مقدمات موجود رہیں گے اور شریف خاندان اس بات کی گارنٹی دیگا کہ میاں نوازشریف صحت بہتر ہوتے ہی وطن واپس آجائینگے ۔توقع ہے کہ آئندہ 48گھنٹوں میں نوازشریف کا نام ای سی ایل سے نکال لیا جائے گا اورانہیں بیرون ملک جانے کی اجازت دیدی جائیگی

Leave a Reply