علاج (نظم) شگفتہ مسکین

Spread the love

اس کے پاؤں کے تلوے ساری ساری رات جلتے رہتے،

سوئے سوئے لگتا جیسے

اس کے تلووں سے کسی نے دہکتے ہوئے انگارے چپکا دیے ہوں،

حلق سوکھ کے کانٹا ہو جاتا، زبان تالو سے چپکی رہتی،

آنکھوں کی بینائی دھیمی پڑتی جا رہی تھی،

رات کو پیشاب کے لئے بار بار اٹھنا پڑتا،

اس کی راتوں کی نیندیں حرام ہو چکی تھیں،

شوگر نے اس کی زندگی اجیرن کر دی تھی،

وہ پیر جی کا مرید تھا،

پیر جی شوگر کے لئے چینی دم کر تے تھے،

اس نے دم کی ہوئی چینی خوب کھائی،

اُس کی تمام تکلیفیں دورہو گئیں،

اب آرام سے قبر میں لیٹا ہے۔

Leave a Reply