75

سرگودھا’ سوتیلے بھائی سمیت 3 افراد کے قتل میں ملوث مجرم کو تختہ دار پر لٹکا دیا گیا

Spread the love

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے مجرم کی رحم کی اپیل خا ر ج جبکہ سیشن جج نے بلیک وارنٹ جاری کیے تھے

سرگودھا(کرائم رپورٹر) سرگودھا میں زمین کے تنا ز ع پر سوتیلے بھائی سمیت خاندان کے 3 افراد کو قتل کرنے کے مقدمے میں ملوث مجرم کو ڈسٹرکٹ جیل میں پھانسی دے دی گئی۔صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے مجرم کی رحم کی اپیل خا ر ج کی تھی جبکہ سیشن جج نے مجرم کے بلیک وارنٹ جاری کیے تھے۔

جیل انتظامیہ کے مطابق 5 اپریل 2005 کو تھانہ بھیرہ کی حدود میں مجرم امجد علی نے زمین کے تنازع پر اپنے سوتیلے بھائی اسلم اور خاندان کے دیگر 2 افراد رمضان اور کوثر بی بی کو فائرنگ کر کے قتل کر دیا تھا۔تھانہ بھیرہ پولیس نے مجرم کے خلاف قتل اور دہشت گردی سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا تھا۔5 جولائی 2005 کو سرگودھا کی انسدادِ دہشت گردی خصوصی عدالت کے جج گل شاد حسن علوی نے مجرم کو پھانسی کی سزا دینے کا حکم دیا جب کہ اعلی عدالتوں نے بھی اس کی پھانسی کی سزا برقرار رکھی۔

صدرِ مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے مجرم کی رحم کی اپیل بھی خارج کر دی جس پر ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سرگودھا مشتاق احمد تارڑ نے 6 نومبر(آج) کے لیے مجرم کے بلیک وارنٹ جاری کیے تھے۔گذشتہ شام مجرم کے اہلِ خانہ نے اس سے آخری ملاقات کی تھی، پھانسی کے وقت جیل کے اطراف میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں