256

عراق مظاہرین نے کربلا میں ایرانی قونصل خانے کی دیوار پر اپنے ملک کا جھنڈا لہرادیا

Spread the love

بغداد(و ائس آف ایشیا )عراق میں حکومت کے خلاف جاری عوامی احتجاج کے دوران مظاہرین نے کربلا میں ایرانی قونصل خانے کی دیوار پر اپنے ملک کا جھنڈا لہرادیا۔ ذرائع کے مطابق قونصل خانے کے سامنے سیکیورٹی فورسز اور کم از کم ایک ہزار مظاہرین کے درمیان جھڑپیں ہوئیں تھیں جن میں متعدد مظاہرین زخمی ہوگئے تھے۔

عراقی وزیر اعظم عادل عبد المہدی نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ “آپ کے احتجاج نے تینوں اعلی اداروں کو اپنے موقف پر نظر ثانی کرنے پر مجبور کیا ہے”۔ سرکاری ٹی وی چینل کے مطابق عراقی وزیر اعظم نے کہا کہ تشدد کا استعمال پرامن مظاہرین کے خلاف نہیں بلکہ قانون ہاتھ میں لینے اور فسادات برپا کرنے والوں کے خلاف کیا جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیکیورٹی فورسز مظاہرین پر حملہ نہیں کر رہی ہیں بلکہ وہ حملہ آوروں کے حملوں کا جواب دے رہی ہیں۔ عادل عبدالمہدہ نے اس عزم کا اظہار کیا کہ احتجاج میں سیکیورٹی فورسز کی طرف سے استعمال ہونے والے ہتھیاروں کی تحقیقات کی جائیں گی۔

قبل ازیں عراقی دارالحکومت بغداد میں ایک سیکیورٹی ذرائع نے بتایا کہ مظاہرین کے انخلا کے بعد اتوار کی صبح دارالحکومت کی بیشتر سڑکیں جو بند کردی گئی تھیں دوبارہ کھول دی ہیں۔ذرائع نے تصدیق کی کہ سیکیورٹی فورسز نے مظاہرین کی کھڑی کی گئی رکاوٹیں دور کردیں اور مظاہرین کے انخلا کے بعد سڑکیں دوبارہ کھول دیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں