132

اسلامی بینک کا سیاحت ، رئیل ا سٹیٹ سیکٹرزمیں سرمایہ کاری کا اعلان

Spread the love

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)وزیر اعظم عمران خان نے جون 2019ء میں قطر کے امیر کے دورہ پاکستان کے بعد دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں بلندیوں پر اطمینان کا اظہارکرتے ہوئے کہاہے پاکستان خطے کیساتھ مضبوط برادرانہ تعلقا ت اور قریبی تعاو ن کو اہمیت دیتا ہے ۔وہ منگل کو یہاں بین الاقوامی اسلامی بینک کے چیف ایگزیکٹو اور پاک قطر تکافل کے چیئرمین شیخ علی بن عبداللہ ثانی الثانی سے ملاقات میں گفتگو کررہے تھے جنہوں نے وزیراعظم کو پاکستان میں مستقبل میں اپنے بزنس اور سرمایہ کاری کے منصوبوں سے آگاہ کیااور بتایا وہ پاکستان میں میزبانی (ہوٹلنگ )کی صنعت میں سرمایہ کاری کا ارادہ رکھتے

اور اس حوالہ سے منصوبہ بندی اگلے مراحل میں ہے، پاک قطر تکافل کے پاکستان میں 70 شاخیں ہیں اور اب ان کا گروپ پاکستان میں ریئل اسٹیٹ ہائوسنگ کی صنعت میں بھی سرمایہ کاری میں دلچسپی لے رہا ہے۔ انہوں نے خطے میں امن و سلامتی کیلئے وزیراعظم عمران خان کی کوششوں کو بھرپور انداز میں سراہا اور اس ضمن میں وزیراعظم عمران خان کے دورہ سعودی عرب کیلئے نیک خواہشات اور تمنائوں کا اظہار کیا۔ وزیراعظم عمران خان نے اس موقع پر کہا پاکستان قطر کیساتھ بھائی چارے پر مبنی مضبوط تعلقات اور قریبی تعاون کو مثبت اہمیت دیتاہے۔ بعدازاں ہوچی سن پورٹ ہولڈنگزکے منیجنگ ڈائر یکٹر ارک لپ کی سربراہی میں وفد نے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی جس میں گروپ نے وزیراعظم کو پاکستان میں 240 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری سے آگاہ کیا ،

وزیر اعظم عمران خان نے ہانگ کانگ کی ہوچی سن پورٹ ہولڈنگز کمپنی کی طرف سے سرمایہ کاری کا بھرپور خیر مقدم کرتے ہوئے کہا حکومت سرمایہ کاری کے سلسلہ میں ہر ممکن سہولیات فراہم کرے گی اور کاروبار کو آسان بنانے پر بھر پور توجہ دے رہی ہے جس سے ملک میں اقتصادی ترقی اور روزگار کے مواقع بڑھیں گے۔اس موقع پر بحری امور کے وزیر سید علی حیدر زید ی، وزیراعظم کے مشیر تجارت عبدالرزاق دائود، معاون خصوصی سید ذوالفقار بخاری، سفیر بیرونی سرمایہ کاری علی جہانگیر صدیقی، چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ زبیر حیدر گیلانی اور سینئر حکام بھی ملاقات میں موجود تھے۔

ہوچی سن پورٹ ہولڈنگز کا وفد ایم ڈی مشرق وسطیٰ و افریقہ اینڈی تسوئی، بزنس ڈائریکٹر ارک نگ اور ان کی پاکستانی مینجمنٹ ٹیم کے ارکان پر مشتمل تھا۔ گروپ ہوچی سن پورٹ ہولڈنگز ایم ڈی ارک لپ کا کہنا تھا سرمایہ کاری سے کراچی پورٹ پر نئے کنٹینر ٹرمینل کی استعداد میں نمایاں اضافہ ہو گا اور ہوچی سن پورٹ کی طرف سے پاکستان میں سرمایہ کاری جہاں بڑھ کر ایک ارب ڈالر تک ہو جائے گی وہیں ہوچی سن کے ملازمین کی تعداد میں 3 ہزار تک اضافہ ہو گا۔ وزیر اعظم کو ہوچی سن پورٹ ہولڈنگز کی ترقی، اس کی پیرنٹ کمپنی سی کے ہوچی سن ہولڈنگزاور پاکستان کی اقتصادی ترقی کے حوالے سے گروپ کے اہم کردار اور عزم کے بارے میں بھی آگاہ کیا گیا، اس کے علاوہ وزیر اعظم کو کراچی کی بندر گاہ کی ترقی کے ذریعے اسے ایشیاء میں تجارت کا مرکز بنانے کے ضمن میں تعاون کے بارے میں بھی بتایا گیا۔

ہوچی سن پورٹ ہولڈنگز دنیا کی سب سے بڑی پورٹ کمپنی ہے جس کے 30 ہزار سے زائد ملازمین ہیں اور یہ کمپنی ایشیاء، مشرق وسطیٰ، افریقہ، یورپ، امریکہ اور آسٹریلیا سمیت 27 ممالک میں 52 بندر گاہوں اور ٹرمینلز پر کام کررہی ہے ۔ کمپنی کا ہیڈکوارٹر ہانگ کانگ میں ہے۔ اس موقع پرسفیر برائے بیرونی سرمایہ کاری علی جہانگیر صدیقی نے کہا کرنسی کی متناسب قدر اور برآمدات میں اضافہ کے نتیجہ میں کنٹینر ٹرمینلز کی استعداد بڑھانے کی ضرورت ہے۔ نتیجتاً اس سرمایہ کاری سے ہماری برآمدی مسابقت میں مدد ملے گی ، کراچی پورٹ ٹرسٹ اور قومی خزانے کیلئے زیادہ ریونیو حاصل ہو گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں