علاقائی معاملات عسکری تنازعے کے بجائے تمام فریقین کے درمیان تعمیری اشتراک کی ضرورت پر زور

Spread the love
Image

پاکستان اور ایران میں مصالحتی عمل آگے بڑھانے پر اتفاق

دونوں نے مشترکہ طورپر قراردیا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں لاکھوں افراد کئی ہفتوں سے محصور ہیں،پاک ایران تعلقات مزید مستحکم کرنے پر اتفاق

ایران نے خطے میں پاکستان کی امن کاوشوں کی تعریف کی اعلامیہ

وزیراعظم پاکستان نے مختلف شعبوں میں باہمی تعاون کے فروغ کا اعادہ کیا ہے

تہران(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان اور ایران میںمصالحتی عمل آگے بڑھانے پر اتفاق رائے ہوگیا علاقائی تناظر عسکری تنازعے کے بجائے تمام فریقین کے درمیان تعمیری اشتراک کی ضرورت پر زور دیا گیا ہے۔ دونوں نے مشترکہ طورپر قراردیا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں لاکھوں افراد کئی ہفتوں سے محصور ہیں، پاک ایران تعلقات مزید مستحکم کرنے پر اتفاق ہوا ہے۔

ایران نے خطے میں پاکستان کی امن کاوشوں کی تعریف کی، وزیراعظم پاکستان نے مختلف شعبوں میں باہمی تعاون کے فروغ کا اعادہ کیا ہے، علاقائی تناظر میں وزیراعظم نے کہاکہ عسکری تنازعے کے بجائے تمام فریقین کے درمیان تعمیری اشتراک کی ضرورت ہے۔ اس امر کا اظہار اعلامیہ میں کیا گیا ہے۔اتوارکو وزیراعظم عمران خان کے دورہ ایران کا اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے۔

اعلامیہ کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے ایران کا ایک روزہ دورہ کیا۔ یہاں وزیراعظم آفس اسلام آباد سے جاری اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کی قیادت کے درمیان خطے میں امن سلامتی سمیت کثیر الجہتی معاملات پر تفصیلی گفتگو ہوئی۔ ایران کی جانب سے خطے میں امن اور سلامتی کیلئے پاکستان کی مخلصانہ کوششوں کو سراہا گیا۔

وزیراعظم عمران خان اور صدر حسن روحانی کے درمیان ملاقات میں تاریخی تعلقات اور تعاون پر بھی تبادلہ خیال ہوا۔ وزیراعظم نے دوطرفہ تعلقات کو مستحکم کرنے کے ساتھ ساتھ معاشی تعاون اور تجارتی روابط میں اضافے کے عزم کا اظہار کیا۔ انہوں نے ایران کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کے عوام کی حمایت پر شکریہ ادا کیا ۔ اعلامیہ کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے صدر حسن روحانی کو مقبوضہ وادی میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے حوالے سے بریف کیا۔

وزیراعظم نے خلیجی ملکوں میں تنازعات کے خاتمے اور مذاکرات کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہاکہ پاکستان معاملات کے حل کیلئے سہولت کاری کیلئے تیار ہے ۔ علاقائی تناظر میں وزیراعظم نے کہاکہ عسکری تنازعے کے بجائے تمام فریقین کے درمیان تعمیری اشتراک کی ضرورت ہے۔ سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای سے ملاقات میں وزیراعظم نے کہاکہ پاکستان کے عوام کشمیرکے حوالے سے ایرانی سپریم لیڈر کے عزم کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔وزیراعظم عمران خان ایران کا ایک روزہ دورہ مکمل کرکے وطن واپس روانہ ہوگئے ہیں۔ تہران کے ہوائی اڈے پر ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف نے وزیراعظم کو الوداع کیا۔

Leave a Reply