افغان فورسز کی کارروائی میں القاعدہ کا سربراہ بھارتی نژاد دہشتگرد عاصم عمر ہلاک

Spread the love

اتر پردیش کا ثناء الحق المعروف عاصم عمر1995میں خاندان سے تمام تعلقات توڑ کر جہادی زندگی شروع کرنے کیلئے غائب ہوگیاتھا
ایمن الظواہری نے 2014میں بھارت ، میانمار اور بنگلہ دیش میں کارروائیوں کیلئے القیس گروپ کا سربراہ مقرر کیا تھا،بھارتی میڈیا

کابل(مانیٹرنگ ڈیسک)افغان اور نیٹو فورسز کی مشترکہ کارروائی میں بھارتی نژاد جنوبی ایشیاء القاعدہ کا سربراہ ثناء الحق المعروف عاصم عمر ہلاک ہو گیا،عاصم عمر جہادی لٹریچر پر مشتمل 4کتابوں کے مصنف بھی تھے، عاصم عمر کی ہلاکت 23ستمبر2019 کوہوئی جبکہ باقاعدہ اعلان 8اکتوبر 2019کو کیا گیا، ثناء الحق بھارتی ریاست اتر پردیش کے ایک کسان گھرانے سے تعلق رکھتے تھے، 1995میں بھارت سے القاعدہ میں شرکت کی غرض سے فرار ہوئے، 2014

میں ایمن الظواہری نے عاصم عمر کو بھارت، بنگلہ دیش اور میانمار میں القیس ونگ کا سربراہ مقرر کیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق جنوبی ایشیا القاعدہ کے سربراہ اور بھارتی نژاد دہشت گرد امریکی و افغان فورسز کے مشترکہ آپریشن میں ہلاک ہو گیا۔عاصم عمر جہادی لٹریچر پر مشتمل 4کتابوں کے مصنف بھی تھے۔

عاصم عمر1991میں دیوبند میں دارالعلوم مدرسے سے فارغ التحصیل ہوئے۔ 1995میںوہ اپنے خاندان سے تمام تعلقات توڑ کر نئی جہادی زندگی شروع کرنے کیلئے غائب ہوگیاتھا۔ستمبر 2014میں القاعدہ کے رہنما ایمن الظواہری نے بھارت ، میانمار اور بنگلہ دیش میں القیس کے نام سے کارروائیوں کا آغاز کا اعلان کیا اور ایک ویڈیو پیغام میں عمر کو اس یونٹ کا سربراہ نامزد کیا۔

Leave a Reply