افغانستا ن حکام نے طورخم بارڈر 24گھنٹے کھلا رکھنے کی راہ میں رکاوٹیں پیدا کرنی شروع کر دیں

Spread the love

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)افغانستان کی طرف سے طورخم بارڈر 24گھنٹے کھلا رکھنے کی راہ میں رکاوٹیں ڈال دی گئیں،وزیراعظم عمران خان کے افتتاح کے باوجود افغان بارڈر 24 گھنٹے آپریشنل نہیں کیا جا سکا، افغان گمرک(کسٹم) نے 24 گھنٹے بارڈر کھولنے سے انکار کر دیا ۔

ذرائع کے مطابق افغان گمرک کے مطابق سہولیات اور عملہ نہ ہونے کی وجہ سے بارڈر کھلا نہیں رکھ سکتے،معمول کے مطابق طورخم بارڈر صبح نو بجے کھولے گا اور شام سات بجے بند ہوگا۔کسٹم کلیئرنس ایجنٹس طورخم ذرائع کے مطابق کلیئرنس اور گیٹ پاس کے باوجود روزانہ تین سو گاڑیاں سرحد پار نہیں کرسکتے،

افغان الیکشن نتائج نہ آنے تک گاڑیوں کی آمد رفت مزید کم ہوسکتی ہے۔ طور خم ذرائع نے بتایاکہ تجارت میں 30 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔

Leave a Reply