حکومت مذاکرات کے ذریعے سیاسی تناؤ ختم کرنے کی کوشش کرے: صاحبزادہ حامد رضا

Spread the love

لاہور(مخدوم طارق عزیز سے)سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ ملک کو اس وقت انتشار نہیں اتحاد کی ضرورت ہے۔ بھارت کے ساتھ کشیدہ حالات کے پیش نظر ملک سیاسی تصادم کا متحمل نہیں ہو سکتا اس لئے حکومت مذاکرات کے ذریعے سیاسی تناؤ ختم کرنے کی کوشش کرے۔ حکومت اور اپوزیشن ذاتی نہیں قومی مفادات کو فوقیت دیں۔ مسئلہ کشمیر کے لئے متحد ہونے کی ضرورت ہے۔ بھارت فاشسٹ ملک بن چکا ہے۔ مسلم حکمران مودی کو کشمیر میں کرفیو ختم کرنے کی ڈیڈلائن اور وارننگ دیں۔ مقبوضہ کشمیر میں جبری پابندیوں سے انسانی المیہ جنم لینے لگا ہے اور لاکھوں کشمیریوں کی زندگیاں داؤ پر لگی ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے تنظیم المدارس کے الیکشن کے سلسلہ میں ملک گیر رابطہ مہم کے دوران مختلف شہروں میں علما و مشائخ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ بھارت نے کشمیریوں کو پتھر کے دور میں دھکیل دیا ہے۔ پوری وادی کشمیر قید خانہ بن چکی ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں خوراک کی قلت بدترین بحران کی شکل اختیار کر چکی ہے۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ تنظیم المدارس کے الیکشن میں دھاندلی نہیں ہونے دیں گے۔ مفتی منیب الرحمن کے مدمقابل الیکشن لڑنے والے پینل کو ووٹرز لسٹ فراہم نہیں کی گئی۔ تنظیم المدارس کو ذاتی مفادات کے لئے استعمال کرنے والوں کا محاسبہ ضروری ہے۔

Leave a Reply