93

سانحہ کرائسٹ چرچ،ملزم اپنا مقدمہ شہر سے باہرمنتقل کرنے کی درخواست سے دستبردار

Spread the love

ولنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک)نیوزی لینڈ میں مارچ کے مہینے میں مساجد پر حملہ کرکے 51مسلمان نمازیوں کو قتل کرنے کے ملزم نے جمعرات کو اپنا مقدمہ اس شہر سے باہر منتقل کرنے کی کوشش ترک کر دی جہاں یہ واقعہ پیش آیا تھا ۔ ہائی کورٹ نے کرائسٹ چرچ میں مقدمے سے قبل سماعت کی تاکہ مبینہ بندوق بردار کے مقدمے کی سماعت سائوتھ آئی لینڈ کے شہر سے منتقل کرنے کی مقدمہ کی درخواست پر غور کیا جائے ۔

لیکن جج کیمرون مینڈر نے کارروائی کے آغاز میں اعلان کیا کہ ملزم نے درخواست واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے جو ابتدائی طور پر اگست میں دائر کی گئی تھی۔ فیصلے کی کوئی وجہ نہیں بتائی گئی ہے ۔28سالہ آسٹریلوی شخص نے قتل کے 51 ، اقدام قتل کے 40اور دہشت گردی کی کارروائی میں ملوث ہونے کے الزامات قبول کرنے سے انکار کیا ہے ۔ اس کا مقدمہ اگلے برس دو جون کو کرائسٹ چرچ میں شروع ہوگا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں