134

کشمیریوں کی تقدیر تقریروں سے نہیں تدبیروں سے بدلے گی: صاحبزادہ حامد رضا

Spread the love

لاہور(مخدوم طارق عزیز سے)سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ وزیراعظم کی جنرل اسمبلی کی تقریر کو ریاستی پالیسی میں بدلنے کی ضرورت ہے۔ بھارت کو سبق سکھانے کے لئے سخت فیصلوں کا وقت آ گیا ہے۔ کشمیریوں کی تقدیر تقریروں سے نہیں تدبیروں سے بدلے گی۔ خطہ کی موجودہ صورت حال کے پیش نظر ملک سیاسی عدم استحکام کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ حکومت اہم قومی ایشوز پر اپوزیشن کو ساتھ لے کر چلے۔ حکومت کرفیو سے نجات دلانے کے لئے عالمی برادری اور مسلم حکمرانوں کو ہمنوا بنا کر بھارت پر دباؤ بڑھائے۔ سلگتے کشمیر میں بلکتی انسانیت عالمی برادری کی عملی مدد کی منتظر ہے۔ حکومت سے عوام کی مایوسی خطرے کے آخری نشان کو چھو رہی ہے۔ وزیراعظم کی جنرل اسمبلی کی تقریر میں ناموس رسالت کا معاملہ اٹھانے کا خیرمقدم کرتے ہیں۔ حکومت میر پور کے زلزلہ متاثرین کی بحالی کے لئے موثر اقدامات کرے۔

ان خیالات کا اظہار انھوں نے مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ سفاک بھارتی فوج نے جنت نظیر وادی کا انگ انگ لہو لہو کر دیا ہے۔ کشمیریوں کا قصور مسلمان ہونا ہے۔ کشمیریوں کو بھارتی مظالم سے نجات دلانے کے لئے مسلم حکمران متحد ہو کر مشترکہ کوششیں کریں۔ علاقائی اور عالمی امن و سلامتی کی خاطر اب اقوام متحدہ کے رکن ممالک کو مصلحتوں کا لبادہ اتارنا ہو گا۔ 9 لاکھ کشمیری فوج نے 90 لاکھ کشمیریوں کی زندگی اجیرن بنا رکھی ہے۔ عالمی امن فوج ہی کشمیریوں کو بھارتی بربریت سے محفوظ رکھ سکتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں