91

مثالی حج انتظامات کیلئے انڈونیشیا سمیت دیگر ممالک کے تجربات سے فائدہ اٹھائیں گے:مشتاق بورانہ سیکرٹری مذہبی امور

Spread the love

اسلام آباد(مہتاب پیر زادہ سے) مثالی حج انتظامات کیلئے انڈونیشیا سمیت دیگر ممالک کے حج ماڈل کا جائزہ لے کر ان کے تجربات سے فائدہ اٹھائیں گے۔ یہ بات وفاقی سیکرٹری مذہبی امور میاں مشتاق احمد بورانہ نے جمہوریہ انڈونیشیا کے سفیر عزت مآب جناب ایوان سعیدی امری سے ملاقات کے دوران کہی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں تعینات انڈونیشیا کے سفیر نے وفد کے ہمراہ وزارتِ مذہبی امور کا دورہ کیا اور وفاقی سیکرٹری سمیت دیگر اعلیٰ افسران سے ملاقات کی۔ ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور خصوصاً حج انتظامات کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔ سیکرٹری مذہبی امور نے کہنا تھا کہ انڈونیشیا اور پاکستان حجاج کی تعداد کے حوالے سے دنیا بھر میں سر فہرست ہیں۔ گذشتہ حج کے موقع پر انڈونیشیا سے ڈھائی لاکھ جبکہ پاکستان سے دو لاکھ حجاج سعودی عرب روانہ ہوئے۔

عازمینِ حج کو بہترین خدمات کی فراہمی کے لئے آپس میں بہترین رابطے استوار رکھنااور ایک دوسرے کے کامیاب تجربات سے فائدہ اٹھانا وقت کی ضرورت ہے۔ معزز مہمان نے بتایا کہ انڈونیشیا میں حج کے خواہشمند افرار کی ویٹنگ لسٹ بنائی گئی ہے اور حج اخراجات کا کچھ حصہ ادا کر کے عازمینِ کرام کو رجسٹرڈ کیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ انڈونیشیا اپنے حجاج کرام کی بہترین تربیت اور نظم و ضبط کو یقینی بنانے کیلئے نچلی سطح پر تربیت کا اہتمام کرتا ہے۔

حج پر روانگی سے دو دن پہلے تما م عازمین کی حاجی کیمپ آمد لازمی ہے جہاں انہیں حج کے مسائل اور مشقت کے حوالے سے دوبارہ تربیت دی جاتی ہے۔ سفیر نے مزید بتایا کہ ہر سو حجاج پر ایک معاون تعینات کیا جاتا ہے۔ یہ معاونینِ حج دوران سفر ہر مرحلے پر حجاج کے ساتھ رہتے ہیں۔ ملاقات میں ممبر وزیر اعظم انسپکشن کمیشن اور سابقہ ڈی جی حج ابو احمد عاکف، ایڈیشنل سیکرٹری مذہبی امور محمد داود باڑیچ اور نئے ڈی جی حج ابرار احمد مرزا بھی شریک تھے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں