158

سابق ٹیسٹ کرکٹر اور گگلی کے مؤجد عبدالقادر حرکت قلب بند ہونے سے انتقال کرگئے

Spread the love

عمر 63 برس تھی، وہ 15 ستمبر 1955 کو پیدا ہوئے،سوگوران میں بیوہ اور 6بچے چھوڑے

عبدالقادر نے پہلا ٹیسٹ 1977 میںانگلینڈ اور ون ڈے میچ ویسٹ انڈیز کیخلاف 1983 کھیلا

صدر مملکت،وزیراعظم عمران خان، جنرل قمر جاوید باجوہ ،چیئرمین پی سی بی و دیگر کا اظہار تعزیت

لاہور(صرف اردو ڈاٹ کام)مایہ ناز ٹیسٹ کرکٹر اور گگلی کے مؤجد عبدالقادر دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کرگئے۔ ان کے بیٹے سلمان قادر نے ان کی موت کی تصدیق کردی ہے۔ سلمان قادر نے بتایا کہ والد کو دل کا دورہ پڑا اور انہیں فوری ہسپتال منتقل کر دیا گیا تاہم وہ جانبر نہ ہوسکے اور دل کا دورہ جان لیوا ثابت ہوا۔ سلمان قادر کا کہنا تھا کہ والد نے ہمیشہ حق سچ کی بات کی، کرکٹ اور کرکٹرز کے لئے آواز اٹھانے والے کی آواز ہمیشہ کے لئے بند ہو گئی۔ ان کی نماز جنازہ آج ادا کی جائے گی۔

عبدالقادر کی عمر 63برس تھی۔ وہ 15ستمبر 1955کو پیدا ہوئے۔انہوں نے پہلا ٹیسٹ 1977میں انگلینڈ کے خلاف کھیلا جبکہ ون ڈے کرکٹ میں پہلا میچ ویسٹ انڈیز کے خلاف 1983میں کھیلا۔ ان کو دنیا کرکٹ میں جادوگر کے نام سے پکارا جاتا تھا۔ ان کے سوگواران میں 6بچے اور بیوی شامل ہیں جبکہ وہ معروف کرکٹر عمر اکمل کے سسر تھے،

صدر مملکت،وزیراعظم عمران خان پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق سربراہ پاک فوج جنرل قمر جاوید باجوہ نے لیجنڈ کرکٹر عبدالقادر کے انتقال پر افسوس کا اظہارکرتے ہوئے مرحوم کی مغفرت اور غمزدہ خاندان کے لئے صبر کی دعا کی ہے۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ پاکستان ایک عظیم کھلاڑی اور انسان سے محروم ہوگیا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی اور چیف ایگزیکٹو وسیم خان نے ٹیسٹ کرکٹر عبد القادر کے انتقال پر گہرے رنج اور دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ عبدالقادر کی اچانک وفات کا سن کر دکھ ہوا، وہ لیجنڈری کرکٹر اور بہترین انسان تھے، پاکستان کرکٹ میں ان خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی۔

لیجنڈ کرکٹر عبدالقادر1977 سے 1990 تک کے اپنے دور کرکٹ میں پاکستان کی کئی فتوحات میں اہم کردار ادا کیا، انہوں نے 104 ایک روزہ میچز میں 132 اور 67 ٹیسٹ میچز میں 236 وکٹیں حاصل کیں، انہیں گگلی کا مؤجد بھی کہا جاتا ہے اور معروف آسٹریلوی اسپنر شین وارن انہیں اپنا استاد مانتے ہیں، عبدالقار پاکستان کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر بھی رہ چکے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں