ووٹ شناختی کارڈ پر درج مستقل یا عارضی پر منتقل کر انے کیلئے افراد 28 فروری تک فارم جمع کرواسکتے ہیں، ا لیکشن کمیشن

Spread the love
مزید معلومات کے لیے رائے کندگان الیکشن کمیشن کی ویب سائٹ ملاحظہ کریں

الیکشن کمیشن نے کہا ہے کہ ووٹ شناختی کارڈ پر درج مستقل یا عارضی پر منتقل کر انے کیلئے افراد رجسٹریشن افسر /ضلعی الیکشن کمشنر یا اسسٹنٹ رجسٹریشن افسر کے دفاتر میں28 فروری 2019تک فارم نمبر 21 جمع کرواسکتے ہیں اور رائے دہندگان مزید معلومات کے لئے الیکشن کمیشن آف پاکستان کی ویب سائٹ اور ضلعی الیکشن کمشنر سے رابطہ کریں ۔ پیر کو جاری بیان کے مطابق الیکشنز ایکٹ 2017 کے سیکشن 27 کے مطابق ایسے تمام رائے دہندگان جن کا ووٹ شناختی کارڈ پر درج مستقل یا عارضی پتہ کے علاوہ کسی دیگر پتہ پر درج تھا ان کو 31 دسمبر 2018 تک سہولت دی گئی تھی کہ وہ اپنے ووٹ کو شناختی کارڈ پر درج کسی بھی پتہ پر منتقل کروالیں۔

بیان کے مطابق ایسے تمام رائے دہندگان جو اس سہولت کے پیش نظر اپنے ووٹ کو منتقل نہیں کرواسکے ہیں ان کے ووٹ مذکورہ بالا قانون کی روشنی میں غیر موثر ہوگئے ہیں۔ اس صورتحال کے پیش نظرآئین کی ۔ بیان میں کہاگیا کہ شق 219 (اے) اور الیکشنز ایکٹ 2017 کے سیکشن 36 میں دئیے گئے اختیارات کو استعمال کرتے ہوئے الیکشن کمیشن آف پاکستان نے انتخابی فہرستوں کی نظر ثانی کے احکامات جاری کیے ہیں تاکہ ووٹ کے بنیادی حق کا تحفظ یقینی بنایا جاسکے اوررائے دہندگان کے ووٹ کے اندراج کو شناختی کارڈ پر درج پتوں کے مطابق منتقل کیا جاسکے۔الیکشن کمیشن کے مطابق انتخابی فہرستوں کی نظر ثانی کے اس عمل میں ایسے تمام ووٹ، جو کہ شناختی کارڈ پر درج مستقل یا عارضی پتہ کے علاوہ کسی دیگر پتہ پر درج ہیں، کی نشاندہی کی جائے گی اور انکو شناختی کارڈ پر درج پتوں پر منتقل کیا جائے گا۔ اس عمل کے دوران رائے دہندگان کو بھی یہ سہولت دی جارہی ہے کہ وہ شناختی کارڈ پر درج کسی بھی پتہ کے مطابق اپنا ووٹ منتقل کرواسکیں جس کے لیے وہ رجسٹریشن افسر /ضلعی الیکشن کمشنر یا اسسٹنٹ رجسٹریشن افسر کے دفاتر میں28 فروری 2019تک فارم نمبر 21 جمع کرواسکتے ہیں

۔الیکشن کمیشن کے مطابق رائے دہندگان مزید معلومات کے لئے الیکشن کمیشن آف پاکستان کی ویب سائٹ www.ecp.gov.pk اور دفتر ضلعی الیکشن کمشنر سے رابطہ کریں۔مزید براں ضلع میں قائم مرکز معلومات و شکایات کا رابطہ نمبر اور ووٹ کے اندراج کی معلومات اپنا شناختی کارڈ نمبر 8300 پر ایس ایم ایس کرکے بھی حاصل کی جاسکتی ہیں۔الیکشنز ایکٹ 2017 کے سیکشن 25 کے مطابق نئے شناختی کارڈ بنانے والے شہری شناختی کارڈ بناتے وقت اپنے مستقل یا عارضی / موجودہ پتہ کو ووٹ اندراج کے لیے منتخب کرسکتے ہیں ۔ خیبر پختونخواہ اسمبلی کے حلقوں 100سے 115 میں ہونے والے انتخابات کے پیش نظر قبائلی اضلاع اور ایف آرز میں الیکشن کمیشن نے ووٹ کے اندراج و منتقلی مراکز قائم کردیے ہیں جہاں شہری 10 جنوری 2019 سے 29 جنوری 2019 تک اپنے ووٹ کو اپنے شناختی کارڈ پر درج مستقل یا عارضی پتہ کے مطابق درج کرواسکتے ہیںواضح رہے قومی، صوبائی یا بلدیاتی الیکشن کے انتخابات کے شیڈول جاری ہونے تک رائے دہندگان اس حلقہ انتخاب میں اپنے ووٹ کو درج یا منتقل کرواسکتے ہیں الیکشن کا شیڈول جاری ہونے پر اس حلقہ کی انتخابی فہرستیں منجمد کردی جاتی ہیں ۔

Leave a Reply