سانحہ ساہیوال,سی ٹی ڈی اہلکار قتل کے ذمہ دار قرار

Spread the love

ساہیوال واقعے کی ابتدائی تفتیش میں قتل کا ذمہ دار سی ٹی ڈی اہلکاروں کو قرار دے دیا گیا۔ذرائع کے مطابق ابتدائی تفتیش کے کچھ حقائق سامنے آ گئے ہیں جن کے مطابق محکمہ انسداد دہشتگردی (سی ٹی ڈی) نے معلومات کی بنیاد پر آپریشن کیا تاہم سی ٹی ڈی نے اس کیس میں پیشہ ورانہ غفلت کا مظاہرہ کیا۔ذرائع کے مطابق واقعے میں مقتولین کو قتل کرنے کی ذمہ داری سی ٹی ڈی اہلکاروں پر ڈالی گئی ہے اور غفلت کے مرتکب سی ٹی ڈی اہلکاروں کے خلاف کارروائی کا بھی امکان ہے۔دنیا نیوز کے مطابق ذرائع کا کہناہے کہ آپریشن میں ملوث اہلکاروں کے نام بھی سامنے آگئے ہیں جن میں سب انسپکٹر صفدر حسین کی قیادت میں آپریشن کیا گیا جب کہ دیگر اہلکاروں میں احسن خان، محمد رمضان، سیف اللہ اور حسنین اکبر شامل ہی۔ذرائع نے بتایا کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم مکمل حقائق پر مبنی رپورٹ آج شام تک تیار کرلے گی۔مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے عینی شاہدین کو پولیس لائن آکر بیان ریکارڈ کرانے کی ہدایت کردی۔سانحہ ساہیوال کی تحقیقات کرنے والی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) نے جائے وقوعہ کا دورہ کیا اور مبینہ مقابلے کی جگہ کا جائزہ لیا۔اس موقع پر جے ا?ئی ٹی نے واقعے کے عینی شاہدین کو پولیس لائن میں آکر بیان ریکارڈ کرانے کی ہدایت کی جس پر عینی شاہدین نے مؤقف اپنایا کہ ان سے واقعے کی جگہ ہی بیانات لیے جائیں۔ عینی شاہدین نے جے آئی ٹی کو بتایا گیا کہ اس سانحہ میں کوئی موٹر سائیکل سوار گاڑی کے ساتھ نہیں تھے اور نہ ہی کسی موٹر سائیکل سواروں کی جانب سے فائرنگ کی گئی تھی اس کے علاوہ گاڑی کے اندر سے بھی کوئی فائرنگ نہیں ہوئی تھی بلکہ گاڑی سے بھی کوئی چیز برآمد نہیں ہوئی تھی جبکہ فوٹیج میں بھی موٹر سائیکلوں کے بغیر گاڑی کو نکلتے ہوئے دیکھا گیا ہے ۔ جس پر جے آئی ٹی نے بیان عینی شاہدین کے قلمبند کر لئے ہیں۔ ایڈیشنل آئی جی اعجاز شاہ کی سربراہی میں جے آئی ٹی واقعے پر مختلف پہلوؤں سے تفتیش کر رہی ہے اور ٹیم نے زیرِ حراست سی ٹی ڈی اہلکاروں سے تفتیش کی ہے

Leave a Reply