200

پاکستانی بینک دیوالیہ ہونے جا رہے ہیں، لوگوں نے اربوں روپے نکلوا لیے

Spread the love

نیب کے خوف اور غیر متوازن پالیسیوں کی وجہ سے بینک خالی ہو رہے ہیں

کراچی (کامرس رپورٹر) بینکوں میں رکھی گئی رقوم کے بارے میں پوچھ گچھ کے ڈر سے لوگوں نے بینکوں سے پیسے نکلوانا شروع کر دیئے۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق جولائی کے مہینہ میں عوام نے بینکوں سے 700 ارب روپے نکلوا لئے۔ رقم کہاں سے آئی اور زریعہ آمدن کیا تھا ان سوالات سے بچنے کی خاطر عوام نے بینکوں سے دھڑا دھڑ رقوم نکالنا شروع کر دی ہیں۔

جولائی 2019 میں یومیہ اوسطاً 23 ارب روپے بینک کھاتوں سے نکلے۔ اس طرح بینک کھاتوں سے ایک ماہ میں ہی 700 ارب روپے نکلوا لئے گئے۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق جون 2019 کو بینک کھاتوں میں 14458 ارب روپے موجودتھے جو جولائی 2019کو کم ہو کر 13747 ارب روپے رہ گئے۔

ماہرین کے مطابق عوام کی جانب سے بینکوں سے رقوم نکالنے کی سب سے بڑی وجہ بینک کھاتوں کی جانچ پڑتا ل اور پوچھ گچھ ہے۔ جبکہ عید الاضحی کے باعث بھی عوام نے بینک کھاتوں سے رقوم نکالی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں