197

ایران کو یورپی پابندیوں سے بچ نکلنے کی اجازت نہیں دیں گے: برطانیہ

Spread the love

لندن (انٹرنیشنل ڈیسک)برطانیہ نے باور کرایا ہے کہ ایران کو اپنی پیش کردہ ان ضمانتوں کی پاسداری کرنا چاہیے کہ تیل بردار جہاز “گریس 1” شام ہر گز نہیں جائے گا۔ برطانوی وزارت خارجہ کے ترجمان نے جاری ایک بیان میں مزید کہا کہ “ہم ایران یا کسی بھی شخص کو اس بات کی اجازت ہر گز نہیں دیں گے کہ وہ ایسی حکومت کے حوالے سے یورپی یونین کی پابندیوں کو چکمہ دے جس نے اپنے عوام کے خلاف کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیا ہو”۔

ترجمان کے مطابق “ایران کی جانب سے آبنائے ہرمز میں تجارتی جہازوں کو غیر قانونی طور پر تحویل میں لینے یا ان پر حملہ کرنے کا جبل طارق کی حکومت کے شام پر عائد یورپی یونین کی پابندیوں پر عمل درامد کے ساتھ کوئی موازنہ یا تعلق نہیں”۔

ادھر جبل طارق میں شائع ہونے والے ایک اخبار “کرونیکل” نے بتایا کہ جبل طارق کے حکام نے اپنی تحویل میں موجود ایرانی تیل بردار جہاز کو آزاد کر دیا۔بعد ازاں اعلان کیا گیا کہ جبل طارق میں عدالت عظمی نے مذکورہ جہاز کی رہائی کا فیصلہ جاری کیا تھا۔

اخبار کے مطابق ایرانی تیل بردار جہاز “گریس 1 کی رہائی کا فیصلہ ، ایرانی حکومت کی جانب سے جبل طارق کے حکام کو موصول ہونے والی تحریری سرکاری یقین دہانی کے بعد عمل میں آیا۔ تحریری یقین دہانی میں کہا گیا تھا کہ جہاز میں لدے تیل کو شام میں نہیں اتارا جائے گا۔دوسری جانب لندن میں ایرانی سفیر حمید بعید نجاد نے اپنی فارسی میں کی گئی ایک ٹویٹ میں کہا کہ “امریکا نے آخری لمحات میں تیل بردار جہاز کی رہائی روکنے کے لیے انتہائی کوششیں کیں مگر اسے بدترین ہزیمت کا سامنا کرنا پڑا”۔سفیر نے مزید کہا کہ “تمام تیاریاں پوری کر لی گئی ہیں اور تیل بردار جہاز جبل طارق سے جلد روانہ ہو جائے گا”

اپنا تبصرہ بھیجیں