مقبوضہ کشمیر میں کرفیو برقرار،خوراک ختم،ایک اور حریت رہنما گرفتار

Spread the love

سرینگر،دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) مقبوضہ کشمیر میں عید کے تیسرے روز بھی

کرفیو برقرار ہے جس کے باعث کشمیری عید قیدیوں کی طرح گزارنے پر

مجبور ہیں۔ کشمیری عید قیدیوں کی طرح گزارنے پر مجبور ہیں۔کرفیو کے باعث

سڑکیں سنسان رہیں۔ مرکزی بازاروں اور شاہراہں پر بھارتی فورسز کا سخت پہرہ

ہے۔مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم بدستور جاری ہیں جب کہ جنت نظیر وادی

کشمیریوں کے لیے قید خانے میں تبدیل ہوگئی ہے، وادی میں 10 روز سے

مسلسل کرفیو نافذ ہے، مقبوضہ کشمیر میں عیدالاضحی کے تیسرے روز بھی

کشمیری گھروں میں قید ہیں، کرفیو کے باعث سڑکیں سنسان رہیں، مرکزی

بازاروں اور شاہراں پر بھارتی فورسز کا سخت پہرہ ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں اب

اشیائے خورو نوش کا اسٹاک بھی ختم ہوگیا ہے جب کہ مریض دواں سے بھی

محروم ہوگئے ہیں۔دوسری طرف بھارت نے دہلی ائر پورٹ سے ایک اور

کشمیری رہنما شاہ فیصل کو بیرون ملک روانہ ہونے سے قبل دہلی ائر پورٹ سے

گرفتار کیا،بھارت نے شاہ فیصل کو گرفتار کر کے سرینگر میں نظر بند کر دیا۔ وہ

استنبول روانہ ہونے کے لیے دہلی ائر پورٹ پہنچے تھے۔



Please follow and like us:

Leave a Reply