108

عالمی برادری جنیوا کنونشن کی خلاف ورزی کا نوٹس لے،وزیر خارجہ

Spread the love

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھارت کی جانب

کلسٹر بم کے استعمال کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے عالمی قوانین اور جنیوا

کنونشن کی خلاف ورزی قرار دیا۔ٹوئٹر پیغام میں شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ

بھارت اپنے جنگی جنون میں نہ صرف خطے کا امن برباد کررہا ہے بلکہ کنٹرول

لائن پر انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بھی کررہا ہے۔وزیر خارجہ نے عالمی

برادری سے مقبوضہ کشمیر اور لائن آف کنٹرول کی صورتحال کا نوٹس لینے کا

بھی مطالبہ کیا۔دوسری جانب نجی ٹی وی سے گفتگو میں شاہ محمود قریشی نے

مزید کہا کہ اقوام متحدہ کی ذمیداری ہے کہ مسئلہ کشمیرکو حل کرانے میں کردار

ادا کرے، اقوام متحدہ کو بھارت کی جانب سے سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی

سے متعلق خط لکھا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ امریکی صدر بھی مسئلہ کشمیر کے حل

کیلئے ثالثی کا کردار ادا کرنے کو تیار ہیں، بھارت اب بھی مذاکرات کے لیے تیار

نہیں ہے، لگتا ہے کہ بھارت بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکا ہے، مقبوضہ کشمیر کے

حالات بھارت کے ہاتھ سے نکل چکے ہیں، دنیا پاکستان کی مقبولیت اور امن کی

خواہش دیکھ رہی ہے، دنیا افغانستان میں امن و استحکام کی پاکستان کی کوشش

دیکھ رہی ہے۔دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل کا کہنا ہے کہ بھارت کی

کنٹرول لائن پر سنگین جارحیت، کلسٹر اور کھلونا بموں کے استعمال کی مذمت

کرتے ہیں، بھارتی فورسز کی اشتعال انگیز کارروائیوں کا منہ توڑ جواب دیا

جائے گا، توقع ہے بھارت ابھی 27 فروری نہیں بھولا ہو گا۔انہوںنے مزیدکہاکہ

رواں برس بھارت نے1824 مرتبہ جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی،

عالمی برادری بھارتی خلاف ورزیوں کا نوٹس لے،بچوں،خواتین سمیت معصوم

شہریوں پرآرٹلری کے ذریعے کلسٹرایمونیشن پھینکا گیا۔کلسٹر ایمونیشن کا

استعمال بھارتی جنگی جنون کا عکاس ہے،جنیوا کنونشن کے تحت کلسٹر ایمونیشن

کا سویلین آبادیوں پراستعمال ممنوع ہے۔



اپنا تبصرہ بھیجیں