137

ٹیم مینجمنٹ میں تبدیلی فائدہ مند ہونا چاہئے،فواد عالم

Spread the love

کراچی(سپورٹس رپورٹر)قومی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر فواد عالم نے کہا ہے

کہ سابق چیف سلیکٹر انضمام الحق کی طرح اْن کی روزی روٹی کرکٹ سے

جڑی ہے۔ گزشتہ روز انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ جب اتنے تجربہ کار اور

سینئر کھلاڑی ایسی باتیں کر رہے ہیں تو ہماری پوزیشن سب بخوبی سمجھ سکتے

ہیں۔ فواد عالم کے مطابق وہ اب بھی بھرپور محنت کر رہے ہیں اور فٹنس پر

فوکس ہے کیونکہ وہ پرْ امید ہیں کہ دوبارہ قومی ٹیم میں واپسی ہو گی۔ وہ یہ نہیں

کہتے کہ کسی نے اْن کے ساتھ زیادتی کی تاہم فیصلہ سازی میں سیاہ و سفید کے

مالک آفیشلز کو خود سے یہ سوال ضرور کرنا چاہئے کہ کسی کھلاڑی کی کوئی

حق تلفی تو نہیں ہوئی۔فواد عالم نے بتایا کہ بتیس ، تینتیس سال کی عمرمیں

پاکستانی ٹیم میں ٹیسٹ ، ون ڈے اور ٹی ٹوئنٹی میں بعض کھلاڑیوں کے انٹر

نیشنل ڈیبیو ہو ئے تو عمر کی بات چھوڑ دینا چاہئے۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ نصیب

پر یقین رکھتے ہیں اور جب بھی ان کا وقت آیا تو قومی ٹیم میں واپسی سے کوئی

نہیں روک سکے گا۔ فواد عالم کے مطابق وہ اپنے منہ سے نہیں کہنا چاہتے کہ

انہیں اچھی پرفارمنس کے باوجود مسلسل نظر انداز کیا جا رہا ہے یا اْن کے ساتھ

زیادتی ہوئی لیکن جب دوسرے لوگ یہ بات کہتے ہیں تو خو د پر فخر ہوتا ہے۔ وہ

کسی سے کوئی مطالبہ نہیں کرنا چاہتے صرف اﷲ تعالی سے ہی امید ہے اورجب

مقدر میں ہو گا تو انٹرنیشنل کرکٹ میں واپسی ہو جائے گی۔ فواد عالم نے مزید کہا

کہ ٹیم مینجمنٹ میں جو بھی تبدیلیاں کی جائیں اس سے گرین شرٹس کو فائدہ ہونا

چاہئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں