22 جولائی کے واقعات ایک نظر میں

Spread the love

واقعات

دینا کی پہلی موٹر کار ریس فرانس ہوئی۔

2004ء استنبول سے انقرہ جانے والی مسافر ٹرین کے حادثے میں ایک سو چالیس افراد ہلاک ہو گئے

1994ء گمبیا میں فوج نے حکومت کا تختہ الٹ دیا

ولادت

1887ء گستاف لوڈوگ ہرٹز ایک جرمنی کے طبیعیات دان اورنوبل انعام برائے طبیعیات نوبل انعام جیتنے والے سائنس دان تھے۔ انھوں نے 1925ء میں پیڑ زیمینکے ساتھ ،یہ انعام مشترکہ جیتا جس کی وجہ الیکٹرون کی ایٹم پر ڈالے جانے والے اثرات کی دریافت تھیں۔

1888ء عیل مین والکمینایک روسی نژاد امریکی یہودی موجد ، حیاتیاتی کیمیاءدان اور ماہر خوردوبینی حیاتیات تھے جنھوں نے 1952 کا نوبل انعام وصول کیا تھا۔

1915ء معروف ادیبہ، تحریک پاکستان کی ممتاز قائد اور ایشیا کی پہلی پی ایچ ڈی خاتون، ڈاکٹر شائستہ اکرام اللہ کلکتہ میں پیداہوئیں۔

1942ء مظہر کلیم، پاکستان کے کامیاب قانون دان اور ناول نگار جو عمران سیریز کی وجہ سے خاصے مقبول ہوئے۔ مظہر کلیم کی پیدائش 22 جولائی 1942ء کو پاکستان کے شہر ملتان میں ہوئی۔ والد حمید یار خان ایک برخاست شدہ پولس افسر تھے۔ مظہر کلیم کا اصل نام مظہر نواز خان ہے لیکن مظہر کلیم خان کے قلمی نام سے شہرت پائی۔ ریڈیو ملتان کا مشہور سرائیکی ریڈیو ٹاک شو “جمہور دی آواز” کے اینکرپرسن بھی رہے۔ ملتان بار کونسل کے نائب صدر بھی منتخب ہوئے نیز ملتان کی ضلعی عدالتوں کی سربراہی بھی کی۔ مظہر کلیم نے عمران سیریز جس کی تخلیق ابن صفی نے کی تھی اس پر قلم آزمائی کی۔ یہ بات بھی یاد رہے کہ یہ سب انھوں نے اس وقت کیا جب ابن صفی حیات تھے اور اپنے کرداروں پر لکھ رہے تھے۔ مظہر کلیم نے نہ صرف ابن صفی کے کرداروں پر بلا اجازت لکھا بلکہ اپنے طور پر اس میں مزید توسیع کی اور چند نئے کرداروں کو متعارف کروایا۔ اسی کے ساتھ بچوں کے لیے بھی بہت سے ناول لکھے جن میں چلوسک ملوسک سیریز، آنگلو بانگلو سیریز، فیصل شہزاد سیریز اور چھن چھنگلو سیریز خاصی بڑی مشہور ہوئی۔ 26 مئی 2018ء کو ملتان میں وفات پائی۔

1914ء میجر طفیل محمد شہید (نشانِ حیدر) ہوشیار پور میں پیداہوئے

1923ء مکیش، بھارتی گلوکار

وفات

2003ء موصل میں امریکی فضائی حملے میں صدام حسین کے دونوں بیٹے اور پوتا ہلاک۔
عدی صدام حسین سابقہ عراقی صدر صدام حسین کا سب سے بڑا بیٹا اور قصی صدام حسین کا بھائی تھا۔ کئی سالوں تک عدی کو اس کے والد کا جانشین تصور کیا جاتا رہا، تاہم بعد میں یہ مقام اس کے بھائی قصی کو حاصل ہو گیا جس کی وجہ اس کا قاتلانہ حملے میں شدید زخمی ہونا، غیر معمولی سیلانی طرز عمل اور خاندان کے ساتھ اس کے خراب تعلقات تھے۔ اس پر عصمت دری، قتل اور ایذا رسانی کے کئی الزامات تھے، جس میں عراقی اولمپک کھلاڑیوں اور قومی فٹ بال ٹیم پر تشدد بھی شامل ہیں۔ اسے کئی بار قید، جلاوطن اور اپنے والد کی حکومت کی طرف سے برائے نام سزائے موت کی سزا بھی سنائی گئی۔ 2003ء میں عراق پر ریاستہائے متحدہ کی قیادت میں حملے کے دوران وہ اپنے بھائی قصی اور بھتیجے مصطفی کے ہمراہ ایک امریکی ٹاسک فورس کے ہاتھوں موصل میں ہلاک ہوا۔

2003ء قصیٰ صدام حسین، سابقہ عراقی صدر صدام حسین کا دوسرا بیٹا اور عدی صدام حسین کا چھوٹا بھائی تھا۔ 2000ء میں قصی کو صدام حسین کا جانشین مقرر کر دیا گیا تھا۔ 2003ء میں عراق پر ریاستہائے متحدہ کی قیادت میں حملے کے دوران وہ اپنے بھائی عدی اور بیتے مصطفی کے ہمراہ ایک امریکی ٹاسک فورس کے ہاتھوں موصل میں ہلاک ہوا۔

تعطیلات و تہوار

گمیبیا میں یوم انقلاب

Please follow and like us:

Leave a Reply