کرنٹ اکائونٹ خسارہ پر قابو پا لیا، سال بعد بہتر نتائج نظرآئینگے ،گورنر سٹیٹ بینک

Spread the love

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک) گورنر سٹیٹ بینک رضا باقر کا کہنا

ہے پاکستان کو معاشی چیلنجز کا سامنا ہے لیکن صورتحال بہتر ہو رہی ہے اور

ایک سال بعد حالات میں نمایاں بہتری آئے گی۔اسلام آباد میں تقریب سے خطاب

میں رضا باقرکا مزید کہنا تھاملکی معیشت کو 2 چیلنجز درپیش ہیں، کرنٹ اکاؤنٹ

خسارہ تاریخی بلند سطح یعنی ماہانہ 2 ارب ڈالر تک پہنچ گیا تھا، کچھ سال قبل

ماہانہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ ز یر و تھا، دوسرا بڑا چیلنج مالیاتی خسارہ ہے،

قرضوں اور بجٹ خسارے میں نمایاں اضافہ ہوا، ان دونوں مسائل کو حل کیا جارہا

ہے،اب کرنٹ ا کا ؤنٹ خسارہ کم ہوکرماہانہ ایک ارب ڈالر پر آگیا ہے، نئے بجٹ

میں مالیاتی خسارے میں کمی کیلئے اقدامات کیے گئے ہیں، وزیراعظم نے کفا یت

شعاری کی پالیسی اختیار کی، ہمیں مستقبل کیلئے پرامید رہنا چاہیے، رضا باقر

نے مزید کہا ہمیں برآمد کنندگان کی حوصلہ افزائی کرنی ہے، ایکسچینج ریٹ سے

برآمد کنندگان کو فائدہ ہوا تاہم یہ مستقل حل نہیں، جو لوگ ٹیکس نیٹ سے باہر ہیں

ان سے مدد کی ضرورت ہے، ٹیکس چوری کرنیوالوں کو ٹیکس نیٹ میں لانا

ہوگا، پاکستان کی معاشی آؤٹ لک مثبت ہے، ہماری سمت درست ، منصفانہ ٹیکس

سسٹم پر کام جاری ، ہمیں مل کر سخت محنت کرنی ہے۔ ایک سال بعد اکنامک

نتائج دیکھنے کو ملیں گے ۔برآمدات کی صورتحال بھی کچھ بہتر نہیں ، پرائیویٹ

سیکٹرز کو عالمی ایکسپورٹرز کے مقابلے میں لانا ہو گا۔ ایکسپورٹ سیکٹر کو

گلوبل سیکٹر کی طرز پر اقدامات کر رہے ہیں ، تمام اسٹیک ہولڈرز کو عتماد

میںلیا جا رہا ہے ۔ ٹیکس پیئرز کی حوصلہ افزائی ، نان ٹیکس پیئرز کو ٹیکس نیٹ

میں لانا ہے ۔ایف بی آر میں اصلاحات کی جا رہی ہیں ۔ آئی ایم ایف کیساتھ پا کستا

ن کا معاہدہ کامیابی سے ہو چکا ۔ انٹر نیشنل کمیونٹی کیساتھ بھی پارٹنر شپ

پروگرام جاری ہیں ۔ایف اے ٹی سے نکلنے کیلئے جامع اقدامات کئے گئے ہیں ۔

ملک میں ٹیکس سسٹم کا شفاف نظام لانا چاہتے ہیں، پاکستان کی معاشی آؤٹ لک

مثبت ہے۔



Leave a Reply