فائیو جی ٹیکنالوجی پر کسی ایک ملک کی اجارہ داری نہیں ہونی چاہئے ، چینی وزیر خارجہ

Spread the love

وارسا (مانیٹرنگ ڈیسک)چین کے ریاستی کونسلر اوروزیر خارجہ وانگ ی نے کہا ہے کہ چین دنیا کے ساتھ مل کر فائیو جی ٹیکنالوجی سے مستفید ہونا چاہتا ہے، پوری دنیا کو مل کر اس ٹیکنالوجی سے فائدہ اٹھانا چاہیے۔

وارسا میں پولینڈ کے وزیر خارجہ کے ساتھ ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطا ب کرتے ہوئے وانگ یی نے کہا کہ فائیو جی ٹیکنالوجی کی ترقی بین الاقوامی تعاون کا نتیجہ ہے۔ کسی ایک ملک کی اس ٹیکنالوجی پر اجارہ داری نہیں ہونی چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ چین اس بات کی حوصلہ افزائی کرتا ہے کہ متعلقہ چینی کمپنیاں دوسرے ممالک کے ساتھ فائیو جی کے میدان میں حاصل ہونے والے ثمرات شیئر کریں تاکہ عالمی سطح پر ٹیلی کمیونیکیشنز کی صنعت کے معیار کو بہتر بنایا جا سکے۔

انہوں نے کہا کہ پولینڈ کی حکومت نے کہا ہے کہ ملک میں ٹیلی مواصلات مارکیٹ میں کھلا اور منصفانہ ماحول برقرار رکھا جائے گا۔ ہم سمجھتے ہیں کہ یہ موقف منصفانہ اور مناسب ہے جو وقت کے دھارے اور پولینڈ کے مفادات سے بھی مطابقت رکھتاہے۔ چین پولینڈ کے ساتھ تعاون کرنے کا خواہاں ہے اور دونوں ملکوں کے درمیان جامع اسٹریٹجک شراکت داری کو آگے بڑھانا چاہتا ہے

Please follow and like us:

Leave a Reply