سینئر ترین اداکارہ ذہین طاہرہ کراچی میں انتقال کر گئیں

Spread the love


عمر 70برس تھی۔گزشتہ ماہ دل کا دورہ پڑنے کے بعدنجی اسپتال منتقل کیا گیا تھا۔وینٹی لیٹر پر بھی رہیں۔رات گئے چل بسیں


ذہین طاہرہ 1949ء میں بھارتی شہر لکھنو? میں پیدا ہوئیں، مرحومہ 45 برس ٹیلی ویژن سے منسلک رہیں
 مرحومہ نے 700 سے زائد ڈراموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے۔ریڈیو، اسٹیج اور ٹی وی کے علاوہ کئی فلموں میں بھی کام کیا

کراچی(فلمی رپورٹر)پاکستانی ڈرامہ انڈسٹری کی سینئر ترین اداکارہ ذہین طاہرہ کراچی میں 70 برس کی عمر میں انتقال کر گئیں۔خاندانی ذرائع نے ذہین طاہرہ کے انتقال کی تصدیق کر دی ہے، وہ گزشتہ 2 ہفتے سے اسپتال میں زیرِ علاج تھیں۔گذشتہ ماہ دل کا دورہ پڑنے کے بعد اداکارہ ذہین طاہرہ کو کراچی کے نجی  ہسپتا ل منتقل کیا گیا تھا جہاں وہ زیرِ علاج تھیں۔طبیعت زیادہ خراب ہونے کے باعث وہ وینٹی لیٹر پر بھی رہیں، گذشتہ رات ان کی طبیعت انتہائی خراب ہو گئی جو سنبھل نہ سکی اور وہ اس جہانِ فانی سے رخصت ہو گئیں۔

ان کے بیٹے کا کہنا ہے کہ تدفین کا فی الحال نہیں بتا سکتے۔ذہین طاہرہ نے دہائیوں تک ٹی وی ڈراموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے اور وہ سینئر ترین اور بزرگ اداکارہ قرار دی جاتی ہیں۔ذہین طاہرہ 1949ء میں بھارتی شہر لکھنو  میں پیدا ہوئیں، مرحومہ 45 برس ٹیلی ویژن سے منسلک رہیں، انہوں نے ریڈیو، اسٹیج اور ٹی وی کے علاوہ کئی فلموں میں بھی کام کیا، مرحومہ نے 700 سے زائد ڈراموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے۔ذہین طاہرہ نے متعدد ڈراموں کی پیشکش کے ساتھ ہدایتکاری بھی کی۔انہیں پی ٹی وی کے سب سے مقبول ترین ڈرامے خدا کی بستی میں کام کرنے کا اعزاز بھی حاصل ہے۔

علاوہ ازیں دل دیا دہلیز، انوکھا بندھن، خالہ خیرن، جینا اسی کا نام ہے، چاندنی راتیں، شمع، زینت، عروسہ، عجائب خانہ، راستے دل کے اور دیگر لاتعداد کاسیک ڈراموں میں جلوہ گر ہونے کا موقع پر بھی ملا۔حکومت پاکستان نے شوبز انڈسٹری کے لیے لازاوال خدمات کے اعتراف میں دو ہزار تیرہ میں اداکارہ ذہین طاہری کو تمغہ امتیاز سے بھی نوازا۔

داکار قوی خان اور بہروز سبزواری نے اداکارہ ذہین طاہرہ کے انتقال پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔بہروز سبزواری نے بتایا کہ مرحومہ کی صاحبزادی کینسر کی مریضہ ہیں، ذہین طاہرہ ڈراموں میں کام کر کے ملنے والے معاوضے سے اپنی بیٹی کا علاج کراتی تھیں

Please follow and like us:

Leave a Reply