برہان مظفر وانی کا تیسرا یوم شہادت، سری نگر، اسلام آباد ، کلگام، پلوامہ ، شوپیاں میں کرفیو

Spread the love

برہان وانی کے گھر اور آبائی علاقے ترال میں واقع شریف آباد کے قبرستان کو بھی سیل کر دیا گیا

برہان وانی کے گھر جانے والے راستوں کو بھی کنٹینر لگا کر بند کر دیا گیا فوج کی بھاری نفری تعینات

مکمل ہڑتال سے کاروبار زند گی معطل ،کئی مقامات پر پابندیوں کی پرواہ نہ کرتے ہوئے احتجاج

چار اضلاع میں موبائل انٹرنیٹ سروس بھی معطل، جموں کو سری نگر سے ملانے والی شاہراہ پر فوج

پورے آزاد جموں و کشمیر میں بھی احتجاجی ریلیوں، جلوسوں اور عوامی اجتماعات کا اہتمام کیا گیا تھا

سری نگر(کے پی آئی)کنٹرول لائن کے دونوں جانب ممتاز کشمیری نوجوان رہنما برہان مظفر وانی کا تیسرا یوم شہادت پیر کو اس پختہ عزم کی تجدید کے ساتھ منایا گیا کہ شہدا کے مشن کی تکمیل کیلئے جدوجہد جاری رہے گی۔برہان مظفر وانی کے تیسرے یوم شہادت کے موقع پر بھارتی فوج نے مقبوضہ وادی میں غیر اعلانیہ کرفیو نافذ کرتے ہوئے ترال قبرستان کو بھی سیل کردیا۔

کے پی آئی کے مطابق شہید کمانڈر برہان وانی کی تیسری برسی پر انہیں خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے حریت قیادت نے ہڑتال اور مظاہروں کی کال دی تھی جس کے بعد وادی میں قابض بھارتی فوج نے سری نگر، اسلام آباد ، کلگام ،پلوامہ ، شوپیاں اور دوسرے علاقوں میں مکمل شٹ ڈان کرکے کرفیو نافذ کر دیا ۔

اس دوران مکمل ہڑتال سے کاروبار زند گی معطل ہو کر رہ گیا کئی مقامات پر کشمیریوں نے پابندیوں کی پرواہ نہ کرتے ہوئے احتجاج کیا ،شہید برہان وانی کی برسی کی مناسبت سے وادی بھر میں شہید کی تصویریں اور پوسٹر لگائے گئے ہیں جب کہ بوکھلاہٹ کا شکار بھارتی فورسز نے پوسٹر لگانے کے الزام میں دو نوجوانوں کو گرفتار کرلیا۔ مقبوضہ وادی میں بھاری تعداد میں پولیس اور فوج کی نفری تعینات ہے جب کہ اسلام آباد، پلوامہ، کلگام اور شوپیاں میں انٹرنیٹ سروس بند ہے۔

قابض انتظامیہ نے برہان وانی کے گھر اور آبائی علاقے ترال میں واقع شریف آباد کے قبرستان کو بھی سیل کررکھا ہے جب کہ برہان وانی کے گھر جانے والے راستوں کو بھی کنٹینر لگا کر بند کیا گیا ہے۔حکام نے کولگام سمیت جنوبی کشمیر کے چار اضلاع میں موبائل انٹرنیٹ سروس بھی معطل کر دی ہے جبکہ جموں کو سری نگر سے ملانے والی شاہراہ پر سکیورٹی اہلکاروں کی بڑی تعداد تعینات کی گئی ہے۔

یاد رہے کہ بھارتی فوجیوں نے حزب المجاہدین کے کمانڈرکشمیری رہنما برہان مظفر وانی کو 8 جولائی 2016 کو محاصرے اور تلاشی کی ایک کارروائی کے دوران 2 ساتھیوں کے ہمراہ شہید کر دیا تھا۔ مقبوضہ کشمیر میں مشترکہ حریت قیادت نے ممتاز نوجوان رہنما برہان وانی، انکے ساتھیوں اور 2016 کی احتجاجی تحریک کے دیگر شہدا کو یاد کرتے ہوئے آٹھ جولائی بروز پیر کو مقبوضہ علاقے میں مکمل ہڑتال کی کال دی تھی ادھر پورے آزاد جموں و کشمیر میں احتجاجی ریلیوں جلوسوں اور عوامی اجتماعات کا اہتمام کیا گیا تھا۔

مختلف سیاسی سماجی اور مذہبی جماعتوں نے نوجوان حریت رہنما اور دیگر کشمیری شہدا کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے متعدد پروگرام کیے گئے ۔بڑی ریلی پیر کو مظفر آباد سے نکالی گئی جس کااہتمام جموں وکشمیر لبریشن سیل نے کیاتھا۔یہ ریلی برہان وانی چوک پر عوامی اجتماع میں تبدیل ہو گئی مرکزی پریس کلب مظفر آبادمیں بھی ایک تقریب کا اہتمام کیا گیا تھا ۔ اس موقع پر آزاد جموں و کشمیر کے وزیراعظم فاروق حیدر خان مہمان خصوصی تھے۔

Please follow and like us:

Leave a Reply