179

30 جون کے واقعات ایک نظر میں

Spread the love

30 جون کے واقعات

واقعات

1876ء سربیا نے ترکی کے خلاف جنگ کا اعلان کیا

1894ء کوریا نے چین سے آزادی کا اعلان کیا

1938ء کو مشہور کردار “سپر مین” منظر عام پر آیا ۔

1960ء کانگو نے بیلجیئم سے آزادی حاصل کی

1972ء پہلی دفعہ لیپ سیکنڈ کو مُتناسق عالمی وقت میں جمع کیا گیا۔

1997ء کو ہانگ کانگ 99 بر س کی لیز کے بعد برطانیہ نے چین کو واپس کیا

1997ء کو “ہیری پوٹر ” سلسلے کا پہلا بچوں کا ناول ” ہیری پوٹر اینڈ دی فلاسفر اسٹون ” شائع ہوا جس کی مصنفہ جے کے رولنگز ہيں

2005ء -چوہدری شجاعت حسین پاکستان کے 14ویں وزیر اعظم نامزد۔

2005ء اسپین نے ہم جنس شادی کو قانونی قراردیا

2015 کو انڈونیشیا کا ہرکولیس فوجی طیارہ رہائشی علاقے میدن میں گر کر تباہ ہوا۔ انڈونیشیا کی فوج کے مطابق اس حادثے میں 122 افراد ہلاک ہوئے۔

ولادت

1926ء پاول برگ ایک امریکی کیمیاءدان اور سٹینفورڈ کے پرفیسر ہیں۔ انھوں نے 1980ء میں والٹر گلبرٹ اور ارنست اوٹو فسچر کے ہمراہ مشترکہ طور پر کیمیاء کا نوبل انعام جیتا

1940ء ناظم حسین صدیقی وہ پاکستان کے انیسویں منصف اعظم تھے۔ عدلیہ کا افتخار کہلانے والے افتخار چوہدری ان کے بعد منصف اعظم مقرر ہوئے تھے۔

1940ء نیلو ایک پاکستانی اداکارہ، پاکستان کے شہر سرگودھا میں پیدا ہوئیں اور فلمساز ریاض شاہد سے شادی کی ان کا بیٹا شان پنجابی فلموں کا ہیرو اور ماڈل ہے۔

1966ء مائیک ٹائیسن، امریکی باکسر

1969ء – سنتھ جے سوریا، سری لنکن کرکٹ کھلاڑی

1983ء – مرلن جیکسن، امریکی فٹ بال کھلاڑی

وفات

1857ء گلاب سنگھ (1792-1857) ریاست جموں اور کشمیر کا پہلا مہاراجا تھا۔ انگریزوں اور سکھوں کی پہلی لڑائی میں سکھوں کی شکست کے بعد وہ انگریزوں سے مل گیا۔ انگریزوں نے جموں اور کشمیر 75 لاکھ روپے کے عوض اسے بیچ دیا۔ جب مہاراجہ رنجیت سنگھ نے جموں پر حملہ کیا تو گلاب سنگھ نے اس کا مقابلہ کیا لیکن شکست کھانے پ سکھ فوج کے ساتھ مل گیا۔ سکھ افواج نے جب ملتان اور پشاور پر حملہ کیا تو یہ ان کے ساتھ تھا۔ پنجاب پر انگریزوں کے قبضے کے بعد وہ کشمیر کا مہاراجا بن گیا۔ گلاب سنگھ کے مرنے کے بعد اس کا بیٹا رنبیر سنگھ راجا بنا۔ گلاب سنگھ (1792-1857): لاہور کی سکھ ریاست کا ایک بارسوخ راج درباری ، جسے جموں کا راجا مقرر کیا گیا تھا۔یہ میاں کشورا سنگھ کا بڑا بیٹا تھا جو 17 اکتوبر 1729 کو پیدا ہوا۔ گلاب سنگھ 1809 میں مہاراجا رنجیت سنگھ کی فوج میں تین روپے کے مشاہرے پر رسالے میں ایک فوجی کی حیثیت سے بھرتی ہوا تھا۔جلد ہی اس نے مہاراجا کی نظروں میں اپنا مقام بنا لیا اور اسے 12000 روپے کی جاگیر کے ساتھ 90 گھوڑوں کی کمان دی گئی۔

1919ء جان ولیم سٹرٹ، تھرڈبارون رےلیہ برطانیہ کے ایک طبیعیات دان تھے جنھیں 1904ء میں نوبل انعام برائے طبیعیات دیا گیا جس کی وجہ ان کا مختلف گیسوں کے گاڑھے پن کا مطالعہ تھا جس کی وجہ سے انھوں نے آرگون گیس دریافت کی تھی۔

1930ء ادیب پشاوری پاکستان کے ایک فارسی زبان شاعر تھے جن کا اصل نام سید احمد بن شہاب الدین رضوی تھا۔ وہ موجودہ خیبر پختونخوا کے شہر پشاور کے نزدیک سن 1844ء میں پیدا ہوئے اور اُن کے مطابق وہ مشہور صوفی بزرگ شہاب الدین عمر سہروردی (متوفی 1234ء) کی نسل میں سے تھے۔

2004ء – جمال ابڑو، جدید سندھی افسانے کے بانی

2018ء – فواد سزگین، ترک مسلمان سائںس کا مؤرخ (جامعہ گوئٹے فرنکفرٹ)۔

تعطیلات و تہوار

کانگو کا بیلجیم سے یوم آزادی

30 جون کے واقعات

ڈاکٹر وحید قریشی بطور محقق

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں