172

شرپسند یہودیوں کی جانب سے قبلہ اول کی بے حرمتی،فائرنگ سے فلسطینی شہید

Spread the love

مقبوضہ بیت المقدس(مانیٹرنگ ڈیسک)قابض صہیونی فوج نے مقبوضہ بیت

المقدس میں العیسویہ کے مقام پر فلسطینی شہریوں پر اندھا دھند فائرنگ کی جس

کے نتیجے میں ایک 20سالہ فلسطینی نوجوان شہید اور 4زخمی ہوگئے۔

میڈیارپورٹس کے مطابق قابض صہیونی فوج نے فلسطینی نوجوانوںپر اندھا دھند

فائرنگ کی جس کے نتیجے میں 20سالہ سابق اسیر محمد سمیر عبید شہید اور

چار زخمی ہوگئے۔ فلسطینی نوجوانوں پر فائرنگ کے بعد انہیں زخمی حالت میں

سڑک پر تڑپتے ہوئے پھینک دیا گیا۔دریں اثناتین سو سے زاید یہودی شرپسند

مسجد اقصیٰ میں داخل ہو گئے اور مقدس مقام کی بے حرمتی کرنے لگے ،شر

پسند یہودی مسجد اقصیٰ میں تاریخی اسلامی میوزم میں گھومتے رہے۔ اس موقع

پر مسجد اقصیٰ کے تمام داخلی اور خارجی دروازے بند کر دئیے گئے اور

فلسطینیوں کو نماز کی ادائیگی سے روک دیا گیا۔یہودی شرپسندوں کو اسرائیلی

فوج اور پولیس کی طرف سے فول پروف سیکیورٹی مہیا کی گئی تھی۔واضح رہے

کہ مسجد اقصیٰ کا باب المغاربہ 1967 کے بعد سے قابض صہیونی فوج کے

نرغے میں ہے اور یہودی اسی دروازے کو قبلہ اول میں دھاوا بولنے کیلئے

استعمال کرتے ہیں۔



اپنا تبصرہ بھیجیں