160

سٹیٹ بینک نے 40 ہزار کے غیر رجسٹرڈ اور پرانے پرائز بانڈز کی فروخت بند کردی

Spread the love

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)سٹیٹ بینک آف پاکستان نے 40 ہزار کے پرانے پرائز بانڈز کی فروخت بند کردی

اور 31 مارچ 2020 ء کے بعد کیش بھی نہیں ہوں گے۔سٹیٹ بینک نے 40 ہزار کے غیر رجسٹرڈ اور پرانے

پرائز بانڈز کی فروخت پر پابندی عائد کرتے ہوئے دیگر بینکوں کو بھی ہدایت جاری کی ہیں کہ وہ 40 ہزار

کے غیر رجسٹرڈ اور پرانے پرائز بانڈز کی فروخت روک دیں۔سٹیٹ بینک کے مطابق 40 ہزار کے غیر

رجسٹرڈ اور پرانے پرائز بانڈز 31 مارچ 2020 کے بعد کیش ہوں گے نہ رجسٹرڈ جبکہ اب ان کی کوئی قرعہ

اندازی بھی نہیں ہوگی۔سٹیٹ بینک کے مطابق 40 ہزار کے پرانے پرائز بانڈز کو چالیس ہزار پریمیم پرائز میں

تبدیل کیا جاسکے گا، اس کے علاوہ بانڈ ہولڈرز اسے قومی بچت کے سرٹیفکیٹ میں تبدیل کرواسکتے ہیں۔سٹیٹ

بینک کے مطابق 31 مارچ 2020 تک سٹیٹ بینک اور 6 کمرشل بینکوں سے 40 ہزار کے بانڈز پریمیم پرائز

بانڈز میں رجسٹر کرا سکیں گے اور اگر کیش کرانا ہو تو فارم بھر کر بانڈز کے مالک کے اکاؤنٹ میں رقم

منتقل کی جاسکے گی۔


پرائز بانڈ/پابندی

اپنا تبصرہ بھیجیں