160

اپوزیشن جماعتیں حکومت مخالف تحریک کیلئے آج سر جوڑ کربیٹھیں گی

Spread the love

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر ) اپوزیشن جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) آج 26جون کو صبح

11بجے اسلام آباد میں ہوگی۔جے یو آئی ف کے ترجمان نے بتایا کہ آل پارٹیز کانفرنس جمعیت علمائے

اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی زیر صدارت 26 جون کو اسلام آباد کے ایک نجی ہوٹل میں

ہوگی۔مولانا فضل الرحمان نے اپوزیشن جماعتوں کے مختلف رہنمائوں کو ٹیلی فون کرکے انہیں اے پی سی

میں شرکت کی دعوت دی ۔مولانا فضل الرحمان نے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف اور نائب

صدر مسلم لیگ( ن) مریم نواز سے ٹیلی فونک رابطہ کرکے انہیں اے پی سی میں شرکت کی دعوت دی ۔

مولانا فضل الرحمان نے چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری سے بھی رابطہ کیا جبکہ عوامی نیشنل پارٹی

کے سربراہ اسفند یار ولی خان اور محمود خان اچکزئی سے بھی ٹیلی فونک رابطہ کرکے انہیں اے پی سی

میں شمولیت کی دعوت دی ، نیشنل پارٹی بلوچستان کے صدر میر حاصل خان بزنجوسے ملاقات کرکے انہیں

اے پی سی میں شمولیت کی دعوت دے دی ہے۔ مولانا فضل الرحمان نے حکومتی اتحادی سردار اختر جان

مینگل سے بھی رابطے کی کوشش کی تا ہم اختر مینگل کے ملک سے باہر ہونے کے باعث رابطہ نہیں

ہوسکا۔ تاہم مولانا نے کہا ہے کہ سردار اختر مینگل نے اے پی سی میں شرکت کی یقین دہانی کرائی۔اے پی سی

میں حکومت مخالف تحریک چلانے سے متعلق فیصلہ اور حالیہ بجٹ کے بعد پیدا ہونے والی صورت حال

پرغورکیا جائے گا جبکہ اے پی سی میں چیئرمین سینیٹ کی تبدیلی پر بھی مشاورت کی جائے گی۔اطلاعات

کے مطابق مسلم لیگ ن کا 10رکنی وفد میاحں شہباز شریف اور مریم نواز کی قیادت میں اے پی سی میں

شرکت کریگا جس میں ن لیگ کے چاروں صوبوں کے صدور شاہد خاقان عباسی رانا ثنا اللہ اور راجہ

طفرالحق شامل ہین دعسری طرف پیپلز پارٹی کا پانچ رکنی وفد اے پی سی میں شرکت کریگا جس میں یوسف

رضا گیلانی ،فرحت اللہ بابر رضا ربانی شیری رحمان اور دوسرے رہنما اس میں شامل ہونگے بلاول بھٹو کا

اے پی سی میں شرکت کا ابھی تک فیصلہ نہیں ہوا ان کی شرکت کے فیصلے کیلئے پیپلز پارٹی کی پارلیمانی

پارٹی کا اجلاس آج ہو گا دریں اثناجمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے

کہ آل پارٹیز کانفرنس میں آئندہ کی حکمتے عملی طے ہوگی، میری رائے واضح ہے نئے شفاف الیکشن کرائے

جائیںمولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ملکی معیشت تباہ ہو رہی ہے، موجودہ حکومت کو ہم تسلیم نہیں کر

سکتے، میری رائے واضح ہے نئے شفاف الیکشن کرائے جائیں۔ مسلم لیگ ن کا 10 رکنی وفد شرکت اے پی

سی میں شرکت کرے گا،میاں شہباز شریف اور مریم نواز لیگی وفد کی قیادت کریں گے،لیگی وفد میں شاہد

خاقان عباسی، اور احسن اقبال لیگی وفد میں چاروں صوبوں کے پارٹی صدور کو بھی شامل کیا گیا ہے دوسری

طرف مولانا فضل الرحمان کی جانب سے اپوزیشن سیاسی جماعتوں کے سربراہوں کو دعوت نامے بھجوادیئے

گئے ، ترجمان کے مطابق ایم ایم اے میں شامل سرابرہان کو بھی دعوت نامے بھجوائے گئے ہیں۔



اپنا تبصرہ بھیجیں