نیب کا اسحق ڈار کی گرفتاری کیلئے ٹیم برطانیہ بھجوانے کا فیصلہ

Spread the love

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) مسلم لیگ(ن) کے رہنماء وسابق وزیر خزانہ اسحق

ڈار کی گرفتاری کیلئے نیب کی پانچ رکنی اعلیٰ سطحی ٹیم برطانیہ جائے گی ،

نیب ٹیم کی سربراہی ڈی جی نیب راولپنڈی عرفان منگی کریں گے ۔تفصیلات کے

مطابق سابق وزیر خزانہ اسحق ڈار کی گرفتاری کیلئے حکومت پاکستان اور

برطانیہ کے مابین سمجھوتہ ہو چکا ہے ، گرین سگنل ملنے کے بعد نیب کی ٹیم

کو لندن بھجوانے کیلئے ناموں کو حتمی شکل دی جا رہی ہے ۔ ذرائع نے بتایا کہ

نیب ہیڈ کوارٹر میں ایک اعلیٰ سطحی اجلاس میں اسحق ڈار کی گرفتاری کیلئے

لائحہ عمل کو حتمی شکل دی گئی۔دوسری جانب سابق وفاقی وزیر خزانہ اسحق

ڈار نے پھر سے برطانیہ میں سیاسی پناہ کے حصول کی کوششیں شروع کردیں،

نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق اسحاق ڈار سیاسی پناہ کی درخواست کا

انٹرویو دینے کیلئے گزشتہ روز برطانوی ہوم آفس بھی گئے۔ نجی ٹی وی چینل کی

رپورٹ کے مطابق سابق وزیر خزانہ اسحق ڈار نے گزشتہ برس اکتوبر میں بھی

برطانوی ہوم آفس جا کر سیاسی پناہ کیلئے درخواست دی تھی۔دنیا نیوز کے

مطابقسابق وزیر خزانہ کے خاندانی ذرائع نے اسحق ڈار کی جانب سے سیاسی پناہ

کی کسی بھی درخواست کی سختی سے تردید کر دی ۔اسحق ڈار کے خاندانی ذرائع

کا کہنا ہے کہ وہ اپنے خلاف میڈیا ٹرائل سے آگاہ کرنے کیلئے ہوم آفس گئے

کیونکہ وہ سمجھتے ہیں کہ پاکستانی حکومت برطانیہ کیساتھ ہونے والے میمورینڈم

کو میرے خلاف استعمال کر رہی ہے۔سابق وزیر خزانہ کے صاحبزادے علی ڈار

نے سیاسی پناہ کی درخواستوں کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ اسحق ڈار نے

برطانوی ہوم آفس کو اپنے خلاف ہونیوالے پراپیگنڈا سے آگاہ کیا۔



Leave a Reply