جمال خشوگی قتل کی رپورٹ جاری،سعودی ولی عہد کو کٹہرے میں کھڑا کیا جائے،اقوام متحدہ

Spread the love

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک )اقوام متحدہ نے سعودی صحافی جمال خشوگی کے

قتل کی تحقیقاتی رپورٹ میں کہا ہے سعودی ولی عہد سے تفتیش ہونی چا ہیے ،

شواہد موجود ہیں سعودی حکام قتل میں ملوث ہیں۔بین الاقوامی خبر رساں ادارے

کے مطابق قوام متحدہ کی تحقیقاتی ٹیم نے سعودی صحافی جمال خشوگی کے قتل

کی تحقیقاتی رپورٹ جاری کردی ، جس میں مزید کہا گیا ثبوتوں پرمزید

غیرجانبدارتحقیقات ہونی چاہییں ۔یاد رہے اقوام متحدہ کی تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ

نے تحقیقات کیلئے ترکی کے دورے پر میڈیا سے گفتگومیں کہا تھا شواہد نے

جمال خشوگی کے منظم اوربہیمانہ قتل میں سعودی اہلکاروں کے ملوث ہونے کی

نشاندہی کی ہے، قتل سے متعلق آڈیوٹیپس کی فرانزک جانچ بھی کی گئی۔مارچ

2019 میں اقوامِ متحدہ کے ماہرین برائے انسانی حقوق نے مطالبہ کیا تھا سعودی

صحافی کے قتل کے الزام میں گرفتار 11ملزمان کے کیس کی سماعت کو خفیہ نہ

رکھا جائے، ماہرین نے کیس کی خفیہ سماعت کو عالمی معیار کیخلاف قرار دیتے

ہوئے اوپن ٹرائل کا مطالبہ بھی کیا تھا۔جمال خشوگی قتل کی تفتیش کیلئے تشکیل

دی جانیوالی اقوام متحدہ کی تین رکنی کمیٹی نے حراست میں لیے گئے تمام

ملزمان کا نام فوری طور پر سامنے لانے کا بھی مطالبہ کیا تھا۔خیال رہے بعض

حلقوں نے انکشاف کیا تھا ریاض حکومت کے ناقد واشنگٹن پوسٹ کے صحافی

خشوگی کے قتل میں سعودی ولی عہد شہزا د ہ محمد بن سلمان براہ راست یا ان

کے قریبی افراد ملوث تھے۔



Please follow and like us:

Leave a Reply