بجٹ کے بعد خود ساختہ مہنگائی، اشیاء خورونوش کی قیمتوں میں 10سے 15فیصد اضافہ

Spread the love

لاہور (سٹی رپورٹر) وفاقی حکومت کی جانب سے بجٹ کی پیشی کے بعدشہر بھر

کے متعدد ہول سیلرز اور دوکانداروں کی طرف سے خود ساختہ مہنگائی کر کے

اشیاء خورونوش کی قیمتوں میں 10سے 15فیصد اضافہ کر دیا گیا جبکہ متعدد

دکانوں پر حالیہ ریٹ لسٹ ہی آویزان نہیں کی گئی ہے۔ حکومت کی جانب سے

بجٹ میں منظور شدہ قیمتوں کا اطلاق یکم جولائی سے ہو گا ۔

‘‘ شہر بھر میں

بہت سے ہول سیلرز اور دوکانداروں نے بجٹ کی منظوری سے قبل ہی خود ساختہ

مہنگائی کر کے عوام کی زندگی اجیرن بنا دی ہے ۔ شہر بھر کی متعدد دوکانوں

پرچینی،75 گھی ،190آٹا،50چاول160 ،دودھ ،85دہی 95اور آئل200 روپے

فی کلو تک فروخت کیا جارہا ہے اس کے علاوہ سگریٹوں کی قیمتوں میں بھی

اضافہ کر دیا گیا جس کے بعد سگریٹ کا ایک ڈنڈا 575سے760اور 1432والا

ڈنڈا 1640تک فروخت کیا جارہا ہے علاوہ ازیں ریگولر بوتل کی قیمت میں

بھی5روپے اضافے کے بعد 25روپے تک فروخت کی جارہی ہے ۔ جس سے

شہریوں کو شدیدمشکالات کا سامنا کرنا پڑ رہا جبکہ بڑے دوکانداروں کی ذخیرہ

اندوزی کے سبب اشیاء خورونوش کی قیمتوں میں اضافہ بھی کر دیا گیا ہے ۔

Please follow and like us:

Leave a Reply