مودی کا طیارہ اجازت ملنے کے باوجود پاکستان سے نہیں گزرے گا

Spread the love

بھارتی وزیر اعظم اومان اور ایران کا متبادل راستہ اختیار کریں گے،بھارتی وزارت خارجہ

نئی دلی(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کا طیارہ شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او)سمٹ کے لیے کرغزستان کے دارالحکومت بشکک جانے کے لیے پاکستان کی جانب سے اجازت ملنے کے باوجود اس کی فضائی حدود سے نہیں گزرے گا۔بھارتی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ بشکک کے لیے وزیر اعظم اومان اور ایران کا متبادل راستہ اختیار کریں گے۔بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق وزارت نے اپنے بیان میں کہا کہ ‘بھارتی حکومت نے وی وی آئی پی طیارے کے لیے 2 راستے بتائے تھے جن میں سے اومان، ایران اور وسطی ایشیائی ممالک سے بشکک جانے کا راستہ اختیار کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ یہ اطلاعات اس وقت سامنے آئیں جب وزیر ایوی ایشن غلام سرور خان نے کہا تھا کہ ‘پاکستانی فضائی حدود جذبہ خیر سگالی کے طور پر بشکک جانے والے مودی کے طیارے کے لیے خصوصی طور پر کھولی جائیں گی۔ان کا کہنا تھا کہ ایوی ایشن ڈویژن کو اسلام آباد میں قائم بھارتی ہائی کمیشن کی جانب سے مودی کے طیارے کو پاکستانی فضائی حدود سے گزرنے کی درخواست موصول ہوئی تھی جس کے بعد وزیر اعظم نے تمام اسٹیک ہولڈرز سے مشاورت کے بعد نریندر مودی کے لیے فضائی حدود کھولنے کی ہدایت کی تھی۔

انڈین وزیراعظم مودی آئندہ ہفتے کرغستان کے شہر بشکیک میں شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس میں شرکت کریں گے۔ وزیر اعظم عمران خان بھی اس اہم اجلاس میں شریک ہوں گے تاہم دونوں سربراہان کے درمیان باضابطہ ملاقات تاحال طے نہیں ہوئی ہے

Please follow and like us:

Leave a Reply